عالمی نیو کلیئر سپلائرز گروپ میں رسائی دلوائی جائے ،اعتزاز احسن کا یورپی یونین سے مطالبہ

عالمی نیو کلیئر سپلائرز گروپ میں رسائی دلوائی جائے ،اعتزاز احسن کا یورپی ...

  

 اسلام آباد(اے این این) پاکستان نے یورپی یونین سے کہا ہے کہ وہ جی ایس پی پلس کا درجہ دینے کی طرح عالمی نیو کلیئر سپلائرز گروپ میں پاکستان کی رسائی دلوانے کیلئے اپنا کردار ادا کرے، این ایس جی تک پاکستان کی عدم رسائی تعصب پر مبنی ہے، توانائی کے بحران کا شکار ملک کو سول ایٹمی انرجی کی اشد ضرورت ہے، انسداد دہشت گردی کی جنگ میں پاکستانی قیادت اور فوج ایک صفحے پر موجود ہیں، فرانسیسی اخبار میں توہین آمیز خاکے ناقابل قبول ہیں۔ ان خیالات کا اظہارسینٹ میں قائد حزب اختلاف چوہدری اعتزاز احسن نے بدھ کو پارلیمنٹ ہاؤس میں یورپی یونین کے چار رکنی وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے یورپی یونین کے ساتھ بہترین تعلقات ہیں جنہیں مزید مضبوط اور مستحکم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت پھل پھول رہی ہے اور اس سلسلے میں ہم یورپی یونین کے تعاون کے مشکور ہیں۔ پاکستان دہشت گردی کا شکار ملک ہے اور ہماری پارلیمنٹ نے حال ہی میں انسداد دہشت گردی کے نئے قوانین کی منظوری دی ہے تاکہ ملک سے اس لعنت کاخاتمہ کیا جاسکے۔پاکستان نازک صورتحال سے گزر رہا ہے جس کیلئے ہمیں غیر معمولی اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ دہشت گرد ہمارے معاشرے کیلئے ناسور بن چکے ہیں اور قوم عدم تحفظ کا شکار ہے۔ دہشت گردی کیخلاف تمام سیاسی جماعتیں متحد ہیں اور ہم نے حالیہ فیصلے اتفاق رائے سے کیے ہیں۔ انہوں نے پاکستان کو جی ایس پی پلس کا درجہ دینے پر یورپی یونین کا شکریہ ادا کیا اور کہاکہ اس فیصلے سے ہماری ٹیکسٹائل مصنوعات کو بہت فائدہ ہوا ہے اور ہماری برآمدات میں اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سیاسی قیادت اور فوج دہشت گردی کے خلاف ایک ہی صفحے پر موجود ہیں۔ انہوں نے کہاکہ عالمی نیو کلیئر سپلائر گروپ تک پاکستان کی عدم رسائی تعصب پر مبنی ہے، پاکستان کو توانائی کے بحران کا سامنا ہے اس لئے اسے نیو کلیئر سپلائر گروپ تک رسائی ملنی چاہیے تاکہ ہم پرامن مقاصد کیلئے سول ایٹمی توانائی کو بروئے کار لاسکیں۔ انہوں نے فرانس کے اخبار میں توہین آمیز خاکوں کی اشاعت پر شدید افسوس اور احتجاج کیا اور کہا کہ آزادی اظہار رائے کا منفی استعمال بند ہونا چاہیے۔ یورپی یونین کے وفد نے دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف پاکستان کی کوششوں کی تعریف کی اور یورپی یونین کے مکمل تعاون کا یقین دلایا۔ انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان میں جمہوریت اور پارلیمنٹ کے استحکام میں اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے۔ انہوں نے بین الاقوامی مذہبی ہم آہنگی کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ یورپی یونین کے وفد کی قیادت برطانیہ سے گرین یورپین فری الائنس کے سربراہ جین لیمبٹ نے کی جبکہ رچرڈ ہویٹ ، مائیکل گیلر اور سجاد کریم ان کے ہمراہ تھے ۔ اس موقع پر سینیٹرنزہت صادق، سینیٹر ساحر کامران، رفیق راجوانہ اور عبدالحسیب خان بھی موجود تھے۔

مزید :

علاقائی -