سانحہ بلدیہ ٹاؤن نئے سرے سے تحقیقات کیلئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل

سانحہ بلدیہ ٹاؤن نئے سرے سے تحقیقات کیلئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل

  

 کراچی( آن لائن ،اے این این)سانحہ بلدیہ ٹاؤن کی نئے سرے سے تحقیقات کے لیے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے ، ایڈیشنل آئی جی سندھ خادم حسین بھٹی تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ ہونگے۔ تفصیلات کے مطابق سانحہ بلدیہ ٹاؤن فیکٹری میں آتشزدگی کے کی دوبارہ تحقیقات کیلئے نئی جوائنٹ انوسٹی گیس ٹیم تشکیل دی ہے ۔ سندھ پولیس کے ایڈیشنل آئی جی خادم حسین بھٹی کو ٹیم کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے جو سانحہ بلدیہ ٹاؤن کی از سر نو تحقیقات کریگی اور اپنی رپورٹ وفاقی حکومت کو پیش کرے گی ۔ ٹیم میں ڈی آئی جی مشتاق مہر ڈائریکٹر ایف آئی اے سندھ شاہد حیات بھی شامل ہیں جبکہ رینجرز کے ونگ کمانڈر بھی جے آئی ٹی کا حصہ ہونگے۔واضح رہے کہ سانحہ بلدیہ ٹاؤن میں 260افراد زندہ جل گئے تھے ۔ پہلی جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم نے تہلکہ خیز رپورٹ پیش کی تھی رپورٹ کے مطابق فیکٹری میں آگ لگی نہیں بلکہ لگائی گئی تھی ۔ فیکٹری مالک کے بھتہ نہ دینے پر فیکٹری میں مزدوروں کو بند کرکے آگ لگائی تھی تھی اور حادثے کا ذمہ دار ایم کیو ایم کوٹھہرایا گیا تھا۔ رپورٹ پر ایم کیو ایم کے احتجاج کے باعث وزیراعظم نے اپنے حالیہ دورہ کراچی کے موقع پر حادثے کی دوبارہ تحقیقات کرانے کا حکم دیا تھا جس کی رپورٹ وفاق کو پیش کی جائے گی ۔

مزید :

صفحہ اول -