ذاتی رنجش پر اینٹی کرپشن کے انسپکٹر کا پٹواری پر ٹارچرسیل میں تشدد

ذاتی رنجش پر اینٹی کرپشن کے انسپکٹر کا پٹواری پر ٹارچرسیل میں تشدد

  

گوجرانوالہ (بیورورپورٹ)اینٹی کرپشن انسپکٹر نے ذاتی رنجش پر درج مقدمہ میں ملوث محکمہ مال کے پٹواری کو ٹارچر سیل میں برہنہ کر کے الٹا لٹکا دیا اور وحشیانہ تشدد کے ریکارڈ توڑ دئیے ،پٹواری کی حالت غیر ہو نے پر انٹی کرپشن انسپکٹر دفتر سے رفو چکر ہو گیا ورثاء کا انٹی کرپشن سرکل کے باہر شدید احتجاج ۔بتایا گیا ہے کہ ڈسکہ میں تعینات محکمہ مال کے پٹواری محمد یوسف کو مخالف حریف مطیع اللہ کی جانب سے دی جانیوالی من گھڑت اور بے بنیاد درخواست پر انٹی کرپشن پولیس نے مقامی سی این جی پمپ سے پٹواری محمد یوسف کو اٹھا لیا اور اسے رشوت لینے کے مقدمہ میں ملوث کر کے سیالکو ٹ جیل بھجوا دیا گزشتہ روز مخالف فریق مطیع اللہ وغیرہ نے انٹی کرپشن گوجرانوالہ میں تعینات انسپکٹر رانا نعیم سے ساز باز کر لی جس پر انسپکٹر رانا نعیم نے تفتیش کے حصول کے لیے فرضی ریمانڈ پر پٹواری محمد یوسف کو سنٹر جیل سیالکوٹ سے نکلوا لیا اور گوجرانوالہ انٹی کرپشن سرکل لاکر ٹارچر سیل میں اسے الٹا لٹکا کر وحشیانہ تشدد کر ڈالا ،تشدد کی تاب نہ لاتے ہوئے پٹوای محمد یوسف کی حالت غیر ہو نے پر انسپکٹر رانا نعیم دفتر سے غائب ہو گیا اطلاع ملنے پر پٹواری محمد یوسف کا پیرس پلٹ بھائی شاہد اپنے عزیز اقارب سمیت انٹی کرپشن سرکل پہنچ گیا بھائی کی حالت زار کو دیکھ کر شدید احتجاج کیا ،شاہد نے اس موقع پر صحافیوں کو بتایا کہ اس کے بھائی محمد یوسف کی مدعی مقدمہ مطیع اللہ وغیرہ کے ساتھ ایک عرصہ سے ذاتی رنجش چلی آرہی ہے مخالف مطیع اللہ نے انٹی کرپشن پولیس سے ساز باز کر کے اسے جیل بھجوا دیا پھر بھی اس کا انتقام کی آگ ٹھنڈی نہ ہو ئی تو اس نے گوجرانوالہ میں تعینات انسپکٹر رانا نعیم کو بھاری رشوت کا نذرانہ دیکر اپنے ساتھ ملا لیا بنائے گئے مقدمات سرے سے ہی بے بنیاد اور من گھڑت ہیں انسپکٹر رانا نعیم نے سخت زیادتی کی ہے اعلیٰ حکام نوٹس لیں اس موقع پر پٹواری محمد یوسف کے بھائی اور عزیز و اقارب نے کہا ہے کہ وہ انٹی کرپشن پولیس کی زیادتی کے خلاف بھرپور قانونی چارہ جوئی کریں گے ۔

مزید :

علاقائی -