نوازشریف ایپکس کمیٹی سے صوبوں کو نہ چلائیں یہ خطرنا ک ہو گا :خورشید شاہ

نوازشریف ایپکس کمیٹی سے صوبوں کو نہ چلائیں یہ خطرنا ک ہو گا :خورشید شاہ
نوازشریف ایپکس کمیٹی سے صوبوں کو نہ چلائیں یہ خطرنا ک ہو گا :خورشید شاہ

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) قومی اسمبلی میں قائدحزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا ہے کہ اپیکس کمیٹی کے ذریعے صوبوں کو چلایا گیا تو یہ خطرناک بات ہوگی، نواز شریف غلطی پر غلطی نہ کریں اور دوستوں کو دشمن نہ بنائیں، وزیرامور کشمیر کو گورنر بنانے کی روایت ڈالی ہے تمام سیاسی جماعتوں کی رائے ہے کہ حکومت گلگت بلتستان میں دھاندلی کرنے جارہی ہے، اگر گلگت بلتستان میں دھاندلی کی گئی تو قتل و غارت ہوگی اور کشیدگی ہوگی، حکومت اور تحریک انصاف میں جوڈیشل کمیشن کی مجوزہ مسودہ میں قانونی نکات پر ثالثی کریں گے، تحریک انصاف پارلیمنٹ واپس آجائے، جب تک پیپلزپارٹی کا ایک بھی نمائندہ پارلیمنٹ میں موجود ہے ہم واپڈا سمیت کسی بھی قومی ادارے کی نجکاری نہیں ہونے دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پارلیمنٹ ہاﺅس میں صحافیوں سے گفتگو اور بجلی کمپنیوں کی نجکاری کے خلاف اسلام آباد میں واپڈا ملازمین کی احتجاجی ریلی سے خطاب کے دوران کیا۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ آج پاکستان کا مزدور اور کسان پریشان ہے مگر نوازشریف اور عمران خان کو پرواہ نہیں۔ کونسی جمہوریت کہتی ہے کہ پاکستان کے اداروں کو کوڑیوں کے مول بیچتے رہیں۔ علاوہ وزیں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ جوڈیشل کمیشن کے حوالے سے ن لیگ اور پی ٹی آئی کے رہنماﺅں اسحاق ڈار اور شاہ محمود قریشی سے رابطہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف پارلیمنٹ میں واپس آجائے، پیپلزپارٹی عدالتی کمیشن کے مسودہ میں معاونت کرے گی۔ گلگت و بلتستان میں وفاقی وزیر کو گورنر بنانے پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ن لیگ عمران خان کے الزامات سے جان چھڑا نہیں سکی اور اب گلگت بلتستان میں بھی الیکشن سے پہلے دھاندلی کرنے جرہی ہے۔ میں نواز شریف کو کہنا چاہتا ہوں کہ وہ دھاندلی سے باز آجائیں کیونکہ دھاندلی سے کچھ نہیں ملے گا بلکہ ثابت ہوجائے گا کہ یہ حکومت دھاندلی کی پیداوار ہے۔ اگر گلگت بلتستان میں دھاندلی کی گئی تو قتل و غارت ہوگی اور کشیدگی ہوگی۔

مزید :

اسلام آباد -