امام بارگاہ قصر سکینہ حملہ ، واقعے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ آگئی

امام بارگاہ قصر سکینہ حملہ ، واقعے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ آگئی
امام بارگاہ قصر سکینہ حملہ ، واقعے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ آگئی

  

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ) امام بارگاہ قصر سکینہ میں گزشتہ روز ہونے والے حملے اور واقعے کے حوالے سے پولیس نے ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ مرتب کر لی ہے ۔پولیس کی جانب سے ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ خود کش حملہ آور کو 2 افراد گاڑی میں لے کر آئے جبکہ خود فرار ہو گئے۔حملہ آور نے خاکی کپڑے اور کالی جیکٹ پہن رکھی تھی۔رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ ڈیوٹی پر موجود گارڈ نے حملہ آور کو امام بارگاہ کے اندر جانے سے روکا جس کے بعد حملہ آور کچھ قدم اور چلا جس کے بعد اس نے فائرنگ کر دی۔

ایف آئی اے نے دہشت گردوں کو فنڈنگ کرنے والے اکاﺅنٹس کا سراغ لگا لیا

ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ حملہ آور نے سلاخوں میں ہاتھ اندر ڈال کر کنڈی کھولی اور مسجد میں داخل ہوتے ہی فائرنگ کر دی۔فائرنگ کی آواز سن کر مسجد کے اندر موجود شہری ملک یوسف نے اندر سے کنڈی لگا دی۔رپورٹ میں واقعے کے حوالے سے مزید بتایا گیا ہے کہ خود کش حملہ آور نے بائیں ہاتھ سے اپنی جیکٹ کو اڑانے کی کوشش کی لیکن ناکام رہا اور خود کو گولی مار کر ہلاک کر لیا۔یاد رہے اسلام آباد کے علاقے شکریال روڈ پر واقع امام بارگاہ قصر سکینہ پر خود کش حملہ آور نے حملہ کر دیا تھا جبکہ خود کش بمبار کی جیکٹ پھٹ نہ سکی تھی جس کی وجہ سے کوئی بڑی تباہی نہیں ہو سکی لیکن حملہ آور کی فائرنگ کی وجہ سے 3 افراد شہید ہو گئے تھے۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -