دنیا کی خطرناک ترین جیل میں ’سرچ آپریشن‘، سیوریج کے پائپوں میں سے ایسی خوفناک چیز برآمد کہ سکیورٹی ادارے بھی بوکھلا کر رہ گئے

دنیا کی خطرناک ترین جیل میں ’سرچ آپریشن‘، سیوریج کے پائپوں میں سے ایسی ...
دنیا کی خطرناک ترین جیل میں ’سرچ آپریشن‘، سیوریج کے پائپوں میں سے ایسی خوفناک چیز برآمد کہ سکیورٹی ادارے بھی بوکھلا کر رہ گئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بگوٹا (نیوز ڈیسک) کسی جیل میں تشدد اور ہنگامہ کوئی غیر معمولی بات نہیں ہے اور اکثر اوقات قیدیوں کی لڑائیوں میں لوگوں کے مارے جانے کی خبریں بھی سامنے آتی ہیں لیکن کولمبیا کی ایک جیل کے بارے میں کچھ ایسے خوفناک حقائق سامنے آئے ہیں کہ گویا یہ کوئی جیل نہیں بلکہ موت کا کارخانہ ہے۔
جاپان ٹائمز کے مطابق کولمبیا کے دارالحکومت میں لاموڈیلو جیل کے اندر ایک سرچ آپریشن کیا گیا تو سکیورٹی اہلکار یہ دیکھ کر خوف سے کانپ اٹھے کہ سیوریج کے پائپ کٹے پھٹے انسانی جسموں سے اٹے پڑے تھے۔ سرچ آپریشن کرنے والے عملے اور جیل کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر خدشہ ظاہر کیا گیا کہ کچھ افراد کو قتل کرنے کے بعد ان کے اعضاءنکاسی کے پائپوں میں پھینک دئیے گئے تھے لیکن تحقیقات مکمل ہونے پر معلوم ہوا کہ یہ 100 سے زائد افراد کے بہیمانہ قتل کا معاملہ تھا، جو اب تک انتظامیہ کی نظروں سے اوجھل تھا۔

مزید جانئے: جیل میں قیدیوں کی لڑائی، 49 مارے گئے پھر سکیورٹی ادارے تحقیقات کے لئے پہنچے تو ایسا انکشاف کہ ہل کر رہ گئے، ایسی چیز دریافت کہ دنیا کا ہر مجرم اس ہی جیل میں قید گزارنے کی خواہش کرے
جیل انتظامیہ کا کہنا ہے کہ لاموڈیلا کی طرح کچھ دیگر قید خانوں کے سیوریج کے پائپوں میں بھی ایک عرصے سے لوگوں کو قتل کرنے کے بعد ان کے جسم کے ٹکڑے کر کے پھینکا جارہا تھا۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ مارے گئے افراد میں قیدی، ان سے ملنے کے لئے آنے والے ملاقاتی اور کچھ نا معلوم افراد بھی شامل تھے۔
کولمبیا کی خطرناک جیلوں میں مارکسی باغیوں، ان کے خلاف لڑنے والی پیراملٹری کے قیدیوں اور منشیات کے سمگلروں کی بڑی تعداد قید ہے، جن کے درمیان اکثر خونریز ہنگامے ہوتے رہتے ہیں۔ اس ملک کی جیلیں لاطینی امریکا کی خطرناک ترین جیلیں کہلاتی ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -