پنجاب کے بھائیوں کے لئے ترک بھائیوں کی محبت و خلوص کا پیغام

پنجاب کے بھائیوں کے لئے ترک بھائیوں کی محبت و خلوص کا پیغام
 پنجاب کے بھائیوں کے لئے ترک بھائیوں کی محبت و خلوص کا پیغام

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلامی جمہوریہ پاکستان کی خارجہ پالیسی کا ایک اہم جز ہے کہ پاکستان کے باہمی تعلقات تمام مسلم ممالک سے استوار ہوں تا کہ مسلم امہ یک جاں ہو کر تمام بیرونی مسائل کا حل تلاش کرکے خاتمہ کر سکے۔پاکستان نے روز اول سے یہی کوشش کی ہے کہ تمام ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات رکھے جائیں ۔ترکی وہ ملک ہے جس کے ساتھ پاکستان کے تعلقات ہمیشہ اتنے استوار نہ تھے مگر موجود حکومت اس عمل اور بہترین تعلقات کے لئے کوشاں ہیں یہی وجہ ہے کہ طیب اردگان کے دور میں حکومت میں پاکستان اور ترقی کی دوستی نیا دور شروع ہوا ۔اس میں کوئی مبالغہ ارانی نہیں کہ طیب اردگان کے دور حکومت میں جو کہ 2003 ء سے شروع ہوااورترکی نے بہت اقتصادی معاشرتی اور سیاسی ترقی دیکھی ہے ۔پاکستان میں خاص طور پر ترکی کی ترقیاتی ماڈلز کو مد نظر رکھنے ہوئے ترقیاتی منصوبے متعارف کروائے گئے ہیں جو کہ بہت کامیابی سے اپنا کام کر رہے ہیں اور لاکھوں شہریوں کو جدید دور کی سہولیات فراہم کر کے فائدہ پہنچا رہے ہیں ۔لاہور میں جو صفائی ستھرائی کا نظام نظر آتا ہے وہ ہمارے ترک بھائیوں کے تعاون سے ہی ممکن ہوا۔اس کے علاوہ میٹرو بس کی کامیابی سب سے بڑی مثال ہے جس کے ذریعے شہریوں کو جدید سفری سہولت مہیا کی گئی ہے۔لاکھوں کی تعداد میں شہری روز میٹروبس میں سفر کرتے ہیں او راپنا معیارزندگی بہتر بنا رہے ہیں ۔


طیب اردگان نے نا صرف اپنے ملک کے لوگوں کے دل جیت لئے ہیں بلکہ پاکستان میں بھی بہت سے لوگوں کی پسندیدہ شخصیت بن چکے ہیں ۔جب لیڈر اایسا ہو گا تو اس کے ماتحت کام کرنے والے لوگ بھی یقیناًاعلی خداداد صلاحیتوں کے مالک ہونگے جو ملک اس قدر ترقی کی راہ گامزن ہے ۔اگر طیب اردگان کے دور حکومت سے پہلے کے دور پر غور کیا جائے اور موجودہ دور سے موازانہ کیا جائے تو اعلی اور نمایاں فرق نظر آئے گا ۔ترکی ،یورپ اور ایشیا کا حسین امتزا ج ہے ۔حال میں عالمی شہرت رکھنے والے ترکی کے میئر قادر توپباش نے لاہور کا کامیاب دو روزہ دورہ کیا ہے انہیں ترکی کے عالمی شہرت یافتہ شہر استنبول کا 31واں میئر ہونے کا اعزاز حاصل ہے ۔انہوں نے28مارچ2014ء کو میئر استنبول کا عہدہ سنبھالا او راپنی حسن انتظام کو خداد اد صلاحیتو ں سے ناصر ف ترکی بلکہ غیر ملکی ماہرین کو حیران کر دیا ۔حالیہ دورہ کے دوران وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف اور میئر استنبول ڈاکٹر قادر توپباش نے جدید دور ریڈیو کیب ٹیکسی سروس کا افتتاح کیا ہے ۔ابتدائی طور پر لاہو رمیں 100گاڑیاں چلائی جائیں گی جس کے تعداد میں آنے والے وقت میں اضافہ ہو گا ۔لاہور کے شہریوں کیلئے ایک خوشگوار منظر یہ بھی تھا جب افتتاح کے بعد شہباز شریف اور میئر استبول قادرتوپباش جدید ریڈیو کیب گاڑی میں بیٹھے اور گاڑی کو چلایا ۔پاکستان اور ترکی کی دوستی صدیوں پر محیط ہے اور دنیا جانتی ہے کہ پاکستان اور ترکی کے عوام یکجان دو قالب ہیں بلاشبہ دونوں ممالک کے عوام کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں ۔


ترک قیادت رجب طیب اردگان اور وزیر اعظم نواز شریف کے دور حکومت میں پاک ترک دوستی کو نئی جہت ملی ہے اور یہ دوستی سود مند معاشی تعلقات میں بدل چکی ہے اور دونوں ممالک کے مابین تجارت اور سرمایہ کاری کا آغاز ہوا ہے ۔وزیر اعلی محمد شہباز شریف کے مطابق البراک گروپ نے ان کے گزشتہ دور حکومت میں پنجاب میں سرمایہ کاری کا آغاز کیا اور آج اس گروپ کی سرمایہ کاری اربوں روپے تک پہنچ چکی ہے ۔سرمایہ کاری کے فروغ کیلئے ترکی اور پنجاب کی حکومتوں نے بھی باہمی معاونت کے تحت کام کیا اور اس اشتراک کار کو آگے بڑھایا ۔یہ کہنا بالکل غلط نہ ہو گا کہ اس اشتراک کار میں ہمارے ترکی بھائیوں میئر استنبول ڈاکٹر قادر توپباش کا کردار نہایت نمایاں رہا ہے جنہوں نے ہر موقع ہمارا بھر پور ساتھ دیا ہے ۔جدید ٹیکسی سروس کے آغاز پر میئر استنبول او رالبراک گروپ مبارکباد کے مستحق ہیں اور تمام پنجاب کی عوام ان کے بہت شکرگزار ہیں ۔


ایسی سروس کا آغاز لاہو رکے شہریوں کیلئے بہت بڑا تحفہ ہے۔ ایک سو گاڑیوں سے شروع کی جانے والے اس سروس میں آئندہ چند برسوں میں جدید ریڈیو کیب گاڑیوں کی تعداد ہزاروں تک پہنچ جائے گی جس سے شہریوں کو معیاری سفری سہولیتں میسر آئیں گی۔میئر استنبول ڈاکٹر قادر توپباش نہایت قابل احترام ہیں اور ان کی آمد پر پاکستانی عوام خصوصا پنجاب کی عوام کو بہت دلی خوشی ہوئی اور میئر استنبول کے بھی کچھ ایسے ہی ملے جلے جذبات تھے جن کا اظہار انہوں نے افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ان کا کہنا تھاکہ میں پنجاب کے بھائیوں کیلئے ترک بھائیوں کے طرف سے محبت اور خلوص کا پیغام لیکر آیا ہوں ۔ مستقبل میں بھی تعاون کا فروغ جاری رہے گا اور اپنے مسلمان بھائیوں کی معاونت سے پاکستان ترقی کی راہ میں گامزن رہے گا ۔ ایسے مواقع دیکھ کر دل کو بہت تقویت ملتی ہے کہ آج کے دور میں بھی مسلم امہ ایک دوسرے کا ساتھ دینے کی کوششوں میں لگی ہوئی ہے اور جو مثال دی جاتی ہے کہ مسلم امہ آپس میں جست واحد کی طرح ہیں کہ جسم کے ایک حصے میں درد ہو تو سارا جسم بخار میں لزرتا ہے ۔امید ہے کہ پاک اور ترکی کے تعلقات آنے والے وقت میں اسی طرح پروان چڑھیں اور ہمیشہ استوار رہیں تا کہ پاکستانی عوام کو جدید سہولیات فراہم کر کے ان کا معیار زندگی بہتر بنایا جائے اور خوشحالی کا عمل جاری و ساری رہے۔

مزید :

کالم -