مسلک کے نام پر مسلمانوں کو تقسیم کرنے کے حربوں کو ہر گز کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا

مسلک کے نام پر مسلمانوں کو تقسیم کرنے کے حربوں کو ہر گز کامیاب نہیں ہونے دیا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


سری نگر(کے پی آئی) مقبوضہ کشمیر سیول سوسائٹی (کے سی ایس ڈی ایس ) نے حکومت کو خبردار کیا ہے کہ مسلک کے نام پر مسلمانوں کو تقسیم کرنے کے حربوں کو ہر گز کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا اور اگر حکومت ایسا کرنے سے باز نہ آئی تو اسے لوگوں کے سخت ترین احتجاج کا سامنا کرنا پڑے گا ۔سوسائٹی نے علما کو بھی خبر دار کرتے ہوئے کہا کہ وہ ایسے معاملات میں نہ الجھیں جن سے تباہ کن نتائج سامنے آسکتے ہیں ۔سرینگر میں مشترکہ پریس کانفرنس میں خطاب کرتے ہوئے چیرپرسن کے سی ایس ڈی پروفیسر حمیدہ نعیم نے کہا کہ پولیس کی جانب سے سروے رپورٹ میں جو مسلک کے بارے میں جانکاری حاصل کی جا رہی ہے، اس سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت جان بوجھ کر فرقہ وارانہ فسادات اٹھا رہی ہے اور اس بڑی سازش کو کبھی کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا اور لوگوں کو بھی ایک ہو کر اس کا مقابلہ کرنا چاہئے ۔انہوں نے حکومت کو خبردار کیا کہ وہ ایسا کرنے سے باز آجائے اور مسلمانوں کو امن سے رہنے دیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت مسلک کے نام پرمعاشرے میں نفسیاتی جنگ پیدا کرنے کی کوشش کر رہی ہے اور اگرحکومت اس سے باز نہیں آتی تو اسے لوگوں کے احتجاج کیلئے بھی تیار رہنا چاہئے ۔ انہوں نے ملاحوں اور مولوی حضرات کو بھی خبردار کیا ہے کہ وہ ان معاملات میں نہ پھنسیں اورنہ ہی کوئی ایسا بیان دیں جس کے سنگین نتائج سامنے آئیں ۔انہوں نے تمام کشمیر ی مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ اپنے معاملات خود حل کریں اور ایک ساتھ رہ کر ایک دوسرے کی مدد کریں ۔اس دوران سیول سوسائٹی ممبر شکیل قلندر نے نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے اس بات کا انکشاف کیا کہ اس رپورٹ کو یہاں سے مکمل کر کے دہلی روانہ کر دیا گیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ سیول سوسائٹی اس کیلئے چوکنا ہے اور آج بہت سے ایسے بیان بھی آرہے ہیں، ان سے بھی ہم کو چوکنارہنے کی ضرورت ہے ۔شکیل قلندر نے کہا کہ انہیں اندیشہ ہے کہ بھارت حکومت کے جو ادارے اس کیلئے معمور کئے گے ہیں وہ کہیں نہ کہیں ہمیں خانہ جنگی میں مبتلا کر کے مذہبی معمالات میں الجھانا چاہتے ہیں لیکن ان کی یہ کوشش کبھی کامیاب نہیں ہوگی ۔
انہوں نے علماں سے اپیل کی کہ وہ ایسے بیانات اخبارت میں نہ دیں جن سے آپسی انتشار کا خطرہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ایسا نہ سوچے کہ وہ ایسا کر کے ہمیں مسلکی خانہ جنگی میں مبتلا کریں گے، لیکن ہماری سیول سوسائٹی ہمارا سماج اس کیلئے پوری شدو مد سے چوکنا ہے اور ہم ایسے حربے یہاں کبھی بھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے ۔
انہوں نے عوام سے ہوشیاررہنے کی تلقین کی ہے ۔جمعیت اہل حدیث کے سابق جنرل سکریٹری عبدالرحمان بٹ نے بھی علماکرام اور مسلمان برادری پر زور دیا کہ وہ بھارت کی اس سازش کو ناکام بنانے کیلئے سامنے آئیں ۔

مزید :

عالمی منظر -