کچی آبادیاں کمرشل سیکٹر میں تبدیل ،پلازے بن گئے

کچی آبادیاں کمرشل سیکٹر میں تبدیل ،پلازے بن گئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(اقبال بھٹی)لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی رہائشی سکیموں میں بنائی گئی کچی آبادیاں کمرشل سیکٹر میں تبدیل ہو گئی ہیں خاص کرعلامہ اقبال ٹاؤن سکیم کی کچی آبادی نجف کالونی ،فیصل ٹاؤن کی کچی آبادی دین پورہ (کوٹھے پنڈ)شاہ جمال سکیم کی فاضلیہ کالونی ، اپر مال سکیم کی بستی سیدن شاہ ،گارڈن ٹاؤن کے ٹیپو اور احمد بلاک میں قائم کچی آبادیوں سمیت اوربہت سی کچی آبادیاں شامل ہیں۔ان کچی آبادیوں میں رہائش پذیر افراد کی اکثریت ابھی تک اپنے پلاٹ کی مالک بھی نہیں بن سکے ان پلاٹوں میں سے بیشتر پلاٹ ایل ڈی اے کی ملکیت ہیں اگر اتھارٹی ان لوگوں کو سالانہ بنیادوں پر بھی کمرشل چارجز لگائے تو اربوں روپے اکٹھے ہو سکتے ہیں تفصیلات کے مطابق کچی آبادیوں کے مالکان نے اپنے پلاٹوں کو پلازوں اور دوکانوں کی شکل میں تبدیل کر لیا ہے اور اتھارٹی کی اپنی بنائی گئی کمرشل مارکیٹوں سے زیادہ بارونق اور آبادہیں اور ان میں ریگولر کمرشل مارکیٹوں سے زیادہ کاروبارہوتا ہے۔ اس حوالے سے جب ایل ڈی اے کے افسران سے پوچھا گیا تو ان کاکہنا تھا کہ اتھارٹی اس حوالے سے پہلے ہی ایک لسٹ تیار کر رہی ہے جس میں ایل ڈی اے کی حدودمیں آنے والی تمام کچی آبادیاں شامل ہیں جو موقع پر کمرشل استعمال کر رہے ہیں جب یہ لسٹ مکمل ہو گائے گی تو اسے ڈائریکٹر کمرشلائزیشن ایل ڈی اے کو بھیجاجائے گا ۔انہوں نے یہ بھی بتایا کہ اس لسٹ میں یہ لکھاجائے گا کہ آیا یہ پلاٹ کمرشل استعمال کے لئے مناسب بھی ہے کہ نہیں ہر پلاٹ کے آگے سڑک کی چوڑائی اور ایریا بھی درج ہو گا۔