وزیر اعظم ریاستی اداروں کو اپنی ذاتی ملکیتی اداروں کی طرح مت سمجھیں،شاداب رضا

وزیر اعظم ریاستی اداروں کو اپنی ذاتی ملکیتی اداروں کی طرح مت سمجھیں،شاداب ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور ( نمائندہ خصوصی ) سنی تحریک کے مر کزی رہنما محمد شاداب رضا نقشبندی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم میاں محمد نوازشریف ریاستی اداروں کو اپنی ذاتی ملکیتی اداروں کی طرح مت سمجھیں۔اداروں کو دباؤ میں لا کر اپنی مرضی کے فیصلوں کی عوام اجازت نہیں دیں گے۔نیب اور ایف آئی اے سے متعلق نوازشریف اور زردار ی کے بیانات جمہوریت کے منہ پر طمانچہ ہیں ۔جمہوری حکومت میں ریاستی اداروں کے ساتھ برتاو آمرانہ دور سے بھی بدتر ہو چکے ہیں ۔شخصیات کی بجائے اداروں کو مستحکم کرنا ہوگا ۔محمد شاداب رضا نقشبندی نے اپنے شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ملک میں جنگل کا قانون رائج ہے ۔
آئین کے رکھوالے ہی قانون کی دھجیاں اڑا رہے ہیں ۔اسمبلیوں میں بیٹھے اراکین ربڑ سٹیپ سے زیادہ حیثیت نہیں رکھتے ۔حکمران بادشاہی طرز حکومت چھوڑ کر ملک و قوم کی بہتری کیلئے اقدامات اٹھائیں ۔حکمرانوں کی غیر متوازن پالیسیاں عوام کو پر تشدد انقلاب کی طرف مائل کر رہی ہیں ۔محمد شاداب رضا نقشبندی نے کہا کہ حکمران جماعت کو ملک و قو م کی سالمیت اور خود مختاری گروی رکھ کر نظام حکومت چلانے کی اجازت نہیں دیں گے۔


نواز لیگ اپنا سیاسی گھر بچانے کی غرض سے ریاستی اداروں کا وقار داؤ پر مت لگائے۔انہوں نے کہاکہ حکمران جماعت نے الیکشن سے قبل بہتر معاشی نظان کا جھوٹا نعرہ لگایا تھا ۔تاجروں اور صنعت کا روں کو بے روز گار کرنے کی کسی بھی حکومتی پالیسی کی حمایت نہیں کریں گے ۔ محمد شاداب رضا نقشبندی نے کہاکہ حکمران جماعت جنوبی پنجاب میں متوقع رینجرز آپریشن سے خوفزدہ ہونے کی بجائے ملک و قوم کا مستقبل محفوظ کرنے کی طرف قدم بڑھائیں۔قانون نافذ کرنے والے اداروں پر سیاسی انگلیاں اٹھانے کا مقصد حکومت کی صفوں میں چھپے دہشتگردوں کو بچانا ہے۔کراچی طرز کا رینجرز آپریشن بلا تاخیر جنوبی پنجاب میں ہونا چا ہئے۔دہشت گردوں اور ان کے ہمدردوں کو اب بھاگنے نہیں دیا جا سکتا ۔حکومت عوام کے ساتھ مذاق اور ریاستی اداروں کے ساتھ دھو کہ دھی کا کاروبار بند کرے ۔عوام کو اشتعال اور انقلاب کی طرف حکومت خود لے جا رہی ہے۔محمد شاداب رضا نقشبندی نے کہاکہ وزیر اعظم نواز شریف کو نیب سے متعلق بیان دیتے وقت اپنے منصب کا ضرور خیال رکھنا چا ہئے تھا۔زرداری اور نوازشریف کے بیانات نے قوم پر واضع کر دیا ہے کہ دونوں سیاسی جماعتیں اپنی اپنی کرپشن کو بچانے کیلئے ریاستی اداروں کا تقدس پامال کر رہی ہیں۔