نیب مرکزی ادارہ ہے،چاروں صوبوں میں آزادانہ کارروائی کا اختیار ملنا چاہیے:سراج الحق

نیب مرکزی ادارہ ہے،چاروں صوبوں میں آزادانہ کارروائی کا اختیار ملنا ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(اے این این )امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ مرکز اور پنجاب کے حکمران چاہتے ہیں کہ نیب سندھ میں جو چاہے کرتا رہے ، ہمارے صوبے کو تنگ نہ کریں ، ہم پنجاب میں نیب کوکوئی کاروائی نہیں کرنے دیں گے ۔ وزیراعظم کے نزدیک قومی بنکوں کو لوٹ کر اربوں ڈالر بیرون ملک منتقل کرنے والے معصوم لوگ ہیں تو پھر بتایا جائے مجرم کون ہیں ۔ نیب مرکزی ادارہ ہے جسے چاروں صوبوں میں آزادانہ کاروائی کا اختیار ملناچاہیے ۔ اگر ایک صوبے کے خلاف کاروائی ہوتی ہے اور دوسرے کو پوچھا نہیں جاتاتو اس کے تباہ کن انجام کی تمام تر ذمہ داری موجودہ حکمرانوں پر ہوگی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعیت طلبا عربیہ کے زیر اہتمام ایوان اقبال میں منعقدہ ’’نفاذ اسلام کانفرنس ‘‘سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔کانفرنس سے صدر اتحاد العلماء مولانا عبدالمالک، امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد ، مولانا امجد خان، جمعیت طلباء عربیہ کے منتظم اعلیٰ مولانا عبید الرحمن عباسی و دیگر جید علماء کرام نے بھی خطاب کیا ۔ سراج الحق نے کہاکہ ملک میں معاشی ، اخلاقی اور انتخابی کرپشن کا راج ہے ۔ دنیا بھر میں تیل کی قیمتیں کم ترین سطح پر آ گئی ہیں جبکہ ہمارے حکمران ایک لٹر میں 45 روپے عوام سے کما رہے ہیں ۔ دوائیوں کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کر دیا گیاہے ۔ ملک کے مجبور و محروم عوام کو اس ظلم و جبر کے خلاف اٹھ کھڑا ہوناچاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم احتساب کے اداروں پر برس کر عوام کے اندر یہ تاثر پیدا نہ کریں کہ بڑے لوگ احتساب سے بالا تر ہیں اور انہیں کوئی پوچھنے والا نہیں اور مگر مچھوں کو پکڑنا کسی کے بس میں نہیں ۔68سال سے غریبوں کا خون چوس کر اپنے محل اور بنگلے بنانے والوں کو کٹہرے میں کھڑا کرنے کی ذمہ داری حکومت کی ہے ۔وزیر اعظم مبہم بیان دینے کی بجائے دو اور دو چار کی طرح واضح کریں کہ وہ کون شریف لوگ ہیں جن کی پگڑی نیب اچھال رہا ہے ۔سابق چیئر مین نیب نے تسلیم کیا تھا کہ ملک میں روزانہ 10سے 12ارب روپے کی کرپشن ہورہی ہے ،نیب قوم کو بتائے کہ اتنی بڑی رقم کہاں جارہی ہے ،اس کے حصہ داروں کو بے نقاب کرے اور یہ بھی بتایا جائے کہ اس کرپشن کو کس طرح روکا جاسکتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ نیب کا کام صرف نشاندہی کرنا نہیں بلکہ کرپشن کو روکنا اور لوٹی گئی دولت کو واپس لانا بھی ہے ۔

مزید :

صفحہ اول -