وارنٹ گرفتاری جاری ہونے پر سمٹ بینک کے صدر عدالت میں پیش ہو گئے

وارنٹ گرفتاری جاری ہونے پر سمٹ بینک کے صدر عدالت میں پیش ہو گئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(نامہ نگار )سپیشل جج بینکنگ کرائم کی جانب سے وارنٹ گرفتاری جاری ہونے پر سمٹ بینک کے صدر حسین لوائی عدالت میں پیش ہو گئے،عدالت نے حسین لوائی کے خلاف مالی بدعنوانی کے استغاثہ کی سماعت سات مارچ تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلاء کو بحث کے لئے طلب کر لیادوسری جانب مدعی نے ہراساں کرنے پر حسین لوائی کے خلاف ایک اور درخواست جمع کرادی۔سپیشل جج بینکنگ کرائم عبدالقیوم خان نے کیس کی سماعت کی۔عدالتی نوٹسز کے باوجود سمٹ بینک کے صدر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر حسین لوائی عدالت میں پیش نہ ہونے پر عدالت نے حسین لوائی کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے پولیس کو گرفتار کر کے پیش ہونے کا حکم دے رکھا تھا۔عدالتی حکم کے بعدحسین لوائی از خود عدالت میں پیش ہوئے اور عدالت کو یقین دلایا کہ وہ اپنی حاضری کو عدالت میں یقینی بنائیں گے۔جس پر عدالت نے حسین لوائی کے خلاف مالی بدعنوانی کے استغاثہ کی سماعت 7مارچ تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلاء کو بحث کے لئے طلب کر لیا۔درخواست گزار کے وکیل غلام مرتضی چودھری نے عدالت کو آگاہ کیا کہ سمٹ بینک انتظامیہ مالی بدعنوانی میں ملوث ہے جس کی وجہ سے انہوں نے درخواست گزار کو ناقابل تلافی مالی نقصان پہنچایا۔انہوں نے عدالت میں ایک اوردرخواست جمع کراتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ حسین لوائی خود عدالت میں پیش ہو گئے مگر اپنے مسلح گارڈز کے ذریعے مدعی اسکے بھائی اوربھانجے کو اغوا کرا کے انہیں استغاثہ واپس لینے کے لئے دباو ڈالا اور عدالت میں آنے سے روکا لہذا حسین لوائی کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی کا بھی حکم دیا جائے۔

مزید :

صفحہ آخر -