منشیات سمگلر صمانت خارج ہونے پر ساتھی سمیت رینجرز اور پولیس کو چکمہ دے کر عدالت سے فرار

منشیات سمگلر صمانت خارج ہونے پر ساتھی سمیت رینجرز اور پولیس کو چکمہ دے کر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے 32کلو ہیروئن کے بھارت سمگلنگ کے مقدمے میں ملوث پی ٹی آئی کے یوسی چیئرمین عرفان احمد کی عبوری ضمانت کی درخواست خارج کر دی، ملزم ساتھی سمیت رینجرز اور پولیس کو چکمہ دے کر عدالت سے فرار ہو گیا۔جسٹس صداقت علی خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے تحریک انصاف کے یونین کونسل 180سے منتخب چیئرمین عرفان احمد اوراس کے ساتھی شفاقت علی کی عبوری ضمانت کی درخواست پر سماعت کی، ملزموں کے وکلاء نے موقف اختیار کیا کہ تھانہ ہیئر پولیس نے رینجرز کی مدعیت میں عرفان احمد اور اس کے ساتھیوں کے ساتھ رینجرز اور پولیس کے ساتھ مقابلے،32کلو ہیروئن کی سمگلنگ سمیت دیگر سنگین دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا ہے، عرفان احمد کے خلاف مقدمہ ن لیگ کے مقامی رہنماؤں کے دباؤپر درج کیا ہے، ملزم شامل تفتیش ہونے چاہتے ہیں لہذا عبوری ضمانت منظور کی جائے، محکمہ پراسکیوشن کی طرف سے ڈپٹی پراسکیوٹر جنرل خرم خان نے رینجرز اور پولیس کی تفتیشی رپورٹ اور ریکارڈ عدالت میں پیش کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ملزم عرفان ہیروئن کی بڑی مقدار بھارت سمگل کرنا چاہتا تھا، پکڑے جانے پر ملزم اور اس کے ساتھیوں نے پولیس اور رینجرز کے ساتھ پولیس مقابلہ کیا اور منشیات چھوڑ کر فرار ہو گئے ، تمام ملزموں کو تفتیش میں گنہگار قرار دیا گیا ہے، فاضل بنچ نے تفصیلی دلائل سننے کے بعد دونوں ملزموں کی ضمانت خارج کر دی ، ضمانت خارج ہوتے ہوئے ملزم عرفان احمد اور اس کا ساتھی رینجرز اور پولیس کو چکمہ دے کر ہائیکورٹ سے فرار ہو گئے۔

مزید :

صفحہ آخر -