نارووال، دو ٹیچروں کی آٹھویں جماعت کی طالبہ سے بداخلاقی کی تحقیقات کیلئے کمیٹی قائم

نارووال، دو ٹیچروں کی آٹھویں جماعت کی طالبہ سے بداخلاقی کی تحقیقات کیلئے ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نارووال(نمائندہ خصوصی) روزنامہ پاکستان کی خبر پر ایکشن دو ٹیچروں کی مبینہ طور پر آٹھویں جماعت کی طالبہ سے بداخلاقی کرنے والے ٹیچروں کے خلاف محکمہ تعلیم نارووال کی جانب سے انکوائری کے لئے ٹیمیں تشکیل دئے دی گئی ہیں ۔ روزنامہ پاکستان کی خبر پر فوری ایکشن لیتے ہوئے محکمہ تعلیم نارووال کی ہائی کمان نے واقع کی چھان بین شروع کرتے ہوئے ،گورنمنٹ ہائی سکول سکھوچک کے سینئر ہیڈ ماسٹرنواز شاہین کو انکو ائری آفیسر مقرر کر دیا ہے ۔جو تین یوم کے اندر اپنی انکوائری مکمل کرنے کے بعد اپنی رپورٹ ایگزیکٹو ڈسٹرکٹ آفیسر (ایجوکیشن) نارووال غیاث صابر بٹ کو دیں گئے ۔ خبر کی اشاعت کے بعد شہریوں نے روزنامہ پاکستان کے چیف ایڈیٹر مجیب الرحمن شامی، ایڈیٹر عمر مجیب شامی اور روزنامہ پاکستان کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ اخبار کی خبر کی اشاعت کے بعد قانون نافظ کرنے والے ادارئے حرکت میں آگئے ہیں ۔اور ہم سمجھتے ہیں کہ ہماری بیٹی کے ملزمان اب اپنے انتقام کو پہنچیں گے جبکہ روزنامہ پاکستان کی ٹیم نے متاثرہ گاؤں میں جاکر تمام واقع کی مکمل چھان بین کرنے کے بعد۔اور تمام اداروں کے آفیسران بالا کو بھی واقع سے آگاہ کیا اور ان سے موقف حاصل کرنے کے بعد خبر کو ہائی لائٹ کیا جب کہ متاثرہ گاؤں کے لوگوں نے میڈیا کی ٹیم کو بتایا کہ ملزمان بااثر ہیں اور انہوں نے اپنا گناہ چھپانے کے لئے گاؤں کے اندر اس سے قبل کسی قسم کی میڈیا ٹیم کو گاؤں کے اندر داخل نہ ہونے دیا تھا۔