خرد برد کرنے کے الزام میں گرفتار 2 ٹھیکیدار وں کی عبوری ضمانت

خرد برد کرنے کے الزام میں گرفتار 2 ٹھیکیدار وں کی عبوری ضمانت

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس نثارحسین اور جسٹس روح الامین چمکنی پرمشتمل دورکنی بنچ نے قومی اسمبلی کے حلقہ دیرکے ترقیاتی منصوبوں میں لاکھوں روپے خوردبرد کرنے کے الزام میں ملوث 2سرکاری ٹھیکیداروں کو عبوری ضمانت دیتے ہوئے نیب کو ا ن کی گرفتاری سے روک دیااورجواب مانگ لیاعدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے گوہر رحمان خٹک اوراکبرمہمندایڈوکیٹس کی وساطت سے دائررٹ کی سماعت کی تو انہوں نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذارسرکاری ٹھیکیدارہیں جنہوں نے دیرمیں پاک پی ڈبلیو ڈی کے تحت آب رسانی کے مختلف ٹھیکے حاصل کئے تاہم اب نیب حکام کاموقف ہے کہ مذکورہ ٹھیکوں میں بڑے پیمانے پرگھپلے ہوئے ہیں انہوں نے عدالت کو بتایا کہ درخواست گذاروں نے نیب کو رضاکارانہ واپسی کے تحت رقم کی واپسی کی درخواست دی تھی جو نیب نے بغیرکسی وجہ مسترد کردی اوراب انہیں پلی بارگین پر مجبورکیاجارہاہے حالانکہ اس اقدام سے وہ مختلف ٹھیکوں کے لئے نااہل ہوجائیں گے اوردس سال کے لئے ان کالائسنس بھی منسوخ کیاجائے گا عدالت نے دلائل مکمل ہونے پرملزموں کو عبوری ضمانت دیتے ہوئے نیب سے جواب مانگ لیا۔