ایف آئی اے نے پاکستانی شہریت رکھنے پر بھارتی باشندے کو گرفتار کرلیا

ایف آئی اے نے پاکستانی شہریت رکھنے پر بھارتی باشندے کو گرفتار کرلیا
ایف آئی اے نے پاکستانی شہریت رکھنے پر بھارتی باشندے کو گرفتار کرلیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ویب ڈیسک) ایف آئی اے نے پاکستانی شہریت رکھنے پر ’بھارتی‘ شہری کو گرفتار کر لیا ، ملزم رستم سدھاوا کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ وہ حکمراں جماعت مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے رکن قومی اسمبلی اسفن یار بھنڈارا کے قریبی عزیز ہیں۔ وفاقی تحقیقاتی ادارے کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ ملزم رستم سدھاوا کافی عرصے سے پاکستان میں مقیم تھے اور انہوں نے جعل سازی کے ذریعے پاکستانی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ حاصل کر رکھا تھا۔ مقدمے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم میں شامل ایف آئی اے کے ایک اہلکار نے بی بی سی کو بتایا کہ ملزم کی طرف سے ضمانت کی درخواست سپیشل جج سینٹرل کی عدالت میں دائر کی گئی تھی تاہم جمعرات کے روز عدالت نے درخواست مسترد کر دی، جس کے بعد انھیں احاطہ عدالت سے گرفتار کیا گیا۔رستم سدھاوا گذشتہ تین دہائیوں سے پاکستان میں مقیم ہے اور انہوں نے اسفن یار کی بہن سے شادی کی تھی۔ اس بارے میں اسفن یار سے مسلسل رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تاہم رابطہ نہیں ہو سکا۔ اسفن یار اقلیتوں کے لیے مخصوص کی گئی نشستوں پر حکمراں جماعت کی طرف سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔ ایف آئی اے کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ حکام نے اس ضمن میں اسفن یار بھنڈارا سے رابطہ کیا تھا جس میں ایف آئی اے کے بقول رکن قومی اسمبلی نے اپنے بہنوئی کے بارے میں شکایت کی تھی اور عوام الناس کو آگاہ کیا تھا کہ ان کا ملزم رستم سدھاوا سے کوئی تعلق یا واسطہ نہیں ہے اور نہ ہی وہ ان کے کسی فعل کے ذمہ دار ہیں۔ ایف آئی اے کے اہلکار کے مطابق ملزم کے خلاف جعل سازی اور پاکستان میں غیر قانونی قیام کا مقدمہ درج کیا گیا ہے اور ملزم کو آج مقامی عدالت میں پیش کر کے عدالت سے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی جائے گی، ملزم 1982ءمیں پاکستان آیا اور شناختی کارڈ حاصل کیا، ملزم نے سپیشل جج سنٹرل ملک نذیر کی عدالت میں درخواست ضمانت دائر کررکھی ہے۔

مزید :

اسلام آباد -