طالبعلم قتل کیس، عدالت نے گواہ منحرف ہونے پر ایس ایچ او کو بری کر دیا

طالبعلم قتل کیس، عدالت نے گواہ منحرف ہونے پر ایس ایچ او کو بری کر دیا
طالبعلم قتل کیس، عدالت نے گواہ منحرف ہونے پر ایس ایچ او کو بری کر دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

فیصل آباد( مانیٹرنگ ڈیسک)مدینہ ٹاﺅن میں نقلی پستول سے سیلفی بناتے ہوئے ایس ایچ اوفریاد چیمہ کی اصلی گولی کا نشانہ بننے والے مقتول طالبعلم فرخان احمد خان کے قتل کیس کی سماعت کے دوران ایڈیشنل سیشن جج نے ملزم فریاد چیمہ کو بری کر دیا ہے۔

میڈ یا رپورٹس کیمطابق 23 جون کو مدینہ ٹاﺅن میں 15 سالہ طالبعلم فرخان احمد خان اپنے 17سالہ دوست فہد جاوید کیساتھ نقلی پستول سے سیلفی لے رہے تھا کہ گشت پر مامور ایس ایچ او تھانہ پیپلز کالونی فریاد چیمہ نے انہیں دہشتگرد سمجھ کر فائرنگ کر دی تھی جس کے نتیجے میں طالبعلم فرخان احمد خان جاں بحق ہو گیا تھا جبکہ اسکا دوست فہد جاوید شدید زخمی ہوا۔ آ ج کیس کی سماعت کے دوران ایڈیشنل سیشن جج نے واقعے کے گواہان منحرف ہونے پر سب انسپکٹر فریاد چیمہ کو رہا کر دیا ہے۔

مزید :

فیصل آباد -