تحفظ پاکستان عدالت نے کام شروع کردیا ،پہلے دن 12ملزموں کے خلاف سماعت کی گئی

تحفظ پاکستان عدالت نے کام شروع کردیا ،پہلے دن 12ملزموں کے خلاف سماعت کی گئی
تحفظ پاکستان عدالت نے کام شروع کردیا ،پہلے دن 12ملزموں کے خلاف سماعت کی گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار)ملکی سلامتی کے خلاف جرائم کی سماعت کے لئے لاہورمیں قائم سپیشل تحفظ پاکستان کورٹ نے کام شروع کر دیاہے۔ پہلے روز کالعدم تنظیم کے 12ملزمان کے مقدمے کی سماعت کی گئی۔ عدالت نے پراسیکیوشن ڈیپارٹمنٹ کو تحفظ پاکستان ایکٹ کے تحت درج تمام مقدمات کا چالان پیش کرانے کا حکم دے دیا ہے۔تحفظ پاکستان ایکٹ 2014ءکے تحت قائم سپیشل تحفظ پاکستان کورٹ نے انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی بلڈنگ میں کام شروع کر دیا ہے،واضح رہے کہ گزشتہ برس قائم ہونے والی یہ عدالت تاحال فعال نہیں ہو سکی تھی، گزشتہ روز ڈی ایس پی ناصر باجوہ کی سربراہی میں جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم نے ملکی سلامتی کے خلاف لٹریچر تقسیم کرنے کے الزام میں گرفتار کالعدم تنظیم کے آغا طاہر سمیت 12 ملزمان کو تحفظ پاکستان کورٹ میں پیش کیا۔ ملزمان کے خلاف غالب مارکیٹ پولیس نے بھاری مقدار میں مذہبی شرپسندی پر مبنی لٹریچر برآمد ہونے پر مقدمہ درج کیا تھا۔ جج سپیشل تحفظ پاکستان کورٹ مقرب خان نے کالعدم تنظیم کے ارکان کے خلاف مقدمہ میں ٹرائل شروع کرنے کے لئے سماعت 22فروری تک ملتوی کر دی، آئندہ تاریخ پر ملزمان پر فرد جرم عائد کی جائے گی۔عدالت نے پراسیکیوشن ڈیپارٹمنٹ کو ہدایت کی کہ تحفظ پاکستان ایکٹ کے تحت درج تمام مقدمات کا چالان جلد عدالت میں پیش کیا جائے۔یادر رہے کہ مختلف تھانوں میں تحفظ پاکستان ایکٹ کے تحت درج قومی سلامتی ،سرکار ی اداروں پر حملوں ، فرقہ وارانہ اور اشتعال انگیزتقاریر سمیت 200 سے زائد مقدمات درج ہیں جبکہ ملزمان جیل میں ٹرائل کے منتظر تھے، اب عدالت فعال ہونے کے بعد مقدمات کی سماعت روزانہ ہو گی۔

مزید :

لاہور -