قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کرنے پر ،زینت اور چغتائی سمیت 23لبارٹریاں بند

قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کرنے پر ،زینت اور چغتائی سمیت 23لبارٹریاں بند

  

لاہور (جنرل رپورٹر)پنجاب ہیلتھ کئیر کمیشن نے مزید 23غیر قانونی لیبارٹریز اور ڈ ائیگناسٹک سنٹرز کوکام کرنے سے روک کراُن کے خلاف کارروائی کا آغاز کر دیا ۔ گزشتہ روز کوٹ خواجہ سعید ہسپتال اور شا لیمار ہسپتال کے گردو نواح میں جن13 لیباٹریوں کو کام کرنے سے روکا گیا ان میں زینت لیب اینڈ کولیشن سنٹر، چغتائی پلس لیب اینڈ لیبارٹری، ثمر لیبارٹری، زینت لیب اینڈ کولیشن سنٹر، یونیورسل لاہور لیب کولیکشن سنٹر، منہاج میڈیکل لیب اینڈ کولیکشن سنٹر، لاہور لیب ایند دیجیٹل ایکسرے، ثمر ڈائیگنوسٹک سنٹر، ریسکیو میڈیکل لیب اینڈ ڈائیگنوسٹک سنٹر ، شالیمار لیبارٹری، کونسپٹ لیبارٹری اور شالیمار ایکسرے سنٹر شامل ہیں ۔ دیگر علاقوں میں زینت لیب اینڈ کولیشن سنٹر گنگا رام، زینت لیب اینڈ کولیشن سنٹر وحدت روڈ، کمیونٹی ویلفیر لیب کریم بلاک ، المدینہ ایسرے سنٹر اور جراح ملتان روڈ،المنور لاہور لیب،جنوم لیب اینڈ کولیشن سنٹر ، تجمل لاہور لیب،ہاشمی کولیکشن سنٹر ،سعد لیب اور ہاشمیز لیب کو بھی کام سے روک دیا گیا۔ یہ لیبارٹریز، ڈائیگناسٹک اور کولیکشن سنٹرز پنجاب ہیلتھ کئیر کمیشن سے رجسٹر ڈ نہ تھے اور انفیکشن کنٹرول کاانتظام بھی نہ تھا جبکہ عملہ غیر تربیت یافتہ تھا ۔گزشتہ دو ہفتوں میں کمیشن نے 86 لیباٹریز کے خلاف قانونی کارروائی کی ہے۔ ان تمام لیبارٹریز کے مالکان کو کمیشن کے دفتر طلب کرنے کے علاوہ رجسٹریشن اور لائسنسنگ کے حصول کا پابند بھی کیا گیا ہے۔کمیشن نے واضح کیا ہے کہ کسی بھی علاج گاہ کا پی ایچ سی سے رجسٹریشن اور لائسنس لئے بغیر صحت کی خدمات مہیا کرنا غیر قانونی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -