اولیاء کرام کے مزارات پر حملے ناقابل برداشت ہیں، صاحبزادہ حامد رضا

اولیاء کرام کے مزارات پر حملے ناقابل برداشت ہیں، صاحبزادہ حامد رضا

  

لاہور(وقائع نگار) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے اعلان کیا ہے کہ سنی اتحاد کونسل نے ملک بھر میں ’’تحریک تحفظِ مزاراتِ اولیاء ‘‘ شروع کردی ہے۔ اس سلسلہ میں چاروں صوبوں میں تحفظ تحفظ مزارات اولیاء ریلیاں اور کانفرنسیں منعقد کی جائیں گی ۔ اولیاء کرام کے مزارات پر حملے ناقابل برداشت ہیں۔ درود والوں کو متحد کرکے بارود والوں کا مقابلہ کریں گے۔ سلاطین جاتی امرا سے ملک سنبھالا نہیں جارہا۔ نااہل اور ناکام حکمران مستعفی ہو جائیں۔ پاک فوج نے افغانستان میں گھس کر ٹارگٹڈ آپریشن کرکے قوم کے دل جیت لئے ہیں۔ پنجاب میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن کیلئے رینجرز کو فری ہینڈ دیا جائے۔ فوجی عدالتیں بحال کرکے گرفتار دہشتگردوں کے سپیڈی ٹرائل کے ذریعے چوکوں ، چوراہوں میں پھانسیاں دی جائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ رضویہ میں کیا۔

سنی اتحاد کونسل کے مرکزی و صوبائی عہدیداران کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ قوم آرمی چیف کی طرف امید بھری نظروں سے دیکھ رہی ہے۔ حکومت عوام کو تحفظ دینے میں ناکام ہوچکی ہے۔ پنجاب میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن وقت کی اہم ضرورت ہے۔ داتا دربار ، عبد اللہ شاہ غازی، بری امام، دربار بابا فرید اور دربار شاہ نورانی پر حملوں کے ملزمان گرفتا ر ہو جاتے تو سانحہ لال شہباز قلندر رونما نہ ہوتا۔ نواز شریف بھارت کے خلاف منہ نہیں کھولتا۔ جنگی حالات میں پاکستان کو دلیر حکمرانوں کی ضرورت ہے۔ دہشتگردوں کے خاتمے کے جہاد میں حکومت پاک فوج کا ساتھ نہیں دے رہی۔ حکومت مزارات اولیاء کو سیل کرنے کی بجائے ان کی سیکورٹی کے فول پروف انتظامات کرے۔ اجلاس میں مفتی محمد حبیب قادری، ملک بخش الٰہی، سید جواد الحسن کاظمی، صاحبزادہ حسین رضا، مولانا محمد اکبر نقشبندی، صاحبزادہ مطلوب رضا، صاحبزادہ عمار سعید سلیمانی، میاں فہیم اختر،ارشد مصطفائی، حاجی رانا شرافت علی قادری، راؤ حسیب احمد، صاحبزاد معاذ المصطفیٰ قادری ، مولانا حامد سرفراز ، چوہدری نثار علی ایڈووکیٹ اور دیگر نے بھی شرکت کی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -