لاہور بم دھماکے میں شہید ہونے والوں کے لئے تعزیتی ریفرنس

لاہور بم دھماکے میں شہید ہونے والوں کے لئے تعزیتی ریفرنس

  

لاہور(وقائع نگار)سول سروسز اکیڈیمی ایلومینائی کے سینئر وائس پریزیڈنٹ محمد جاوید انور کی سربراہی میں ریلوے ہیڈکوارٹرزآفس لاہور میں شہید ڈی آئی جی سید احمد مبین اور شہید ایس ایس پی آپریشنز زاہد گوندل اور دیگر شہداء کیلئے تعزیتی ریفرنس کا انعقاد کیاگیا۔

جس میں پچاس کے قریب مختلف سروس گروپس کے افسران نے شرکت کی۔ ڈائریکٹر پبلک ریلیشنز قرأۃ العین فاطمہ نے اسٹیج سیکریٹری کے فرائض سرانجام دیئے۔اس موقع پر شہداء کی زندگیوں پہ مبنی ایک مختصر فلم بھی دکھائی گئی۔

سینئر افسران نے اپنی تقاریر میں کہا کہ وہ شہید افسران کی فیملیوں کے دُکھ میں برابر کے شریک ہیں۔ ڈویژنل کمرشل آفیسر حمدان نذیر نے اِس موقع پر اپنے بیج میٹ زاہد گوندل کے ساتھ اپنی اکیڈیمی کی یادوں کو تازہ کیا۔ اس موقع پر ڈی آئی جی شارق جمال نے کہا کہ ہمیں اِس واقعے کا تجزیہ منطقی بنیادوں پہ کرنا چاہیے اور اس کی وجوہات کا قلع قمع کرنے کے لیے پلاننگ کرنا ہوگی۔ ڈی آئی جی سلطان چوہدری نے بتایا کہ اُنہوں نے دونوں شہداء کے ساتھ کام کیا اور انہیں حد درجہ نفیس، نرم دِل اور پروفیشنل پایا۔ ایس ایس پی زاہد گوندل کی بیگم بیمار تھیں لیکن اُنہوں نے اپنے فرائض منصبی میں کوئی کوتاہی نہیں برتی اور نہ ہی چھٹی کا مطالبہ کیا۔ عبدالباسط خان نے بھی مرحوم فیملیوں کے ساتھ اظہارِ یگانگت کرتے ہوئے کہا کہ ہم جو کام درست کرسکتے ہیں اپنی اپنی بساط کے مطابق وہ ضرور درست کرنے چاہئیں۔ کلیکٹر کسٹمز ذوالفقار یونس جو کہ سول سروس اکیڈیمی ایلومینائی کے چیف کوآرڈینیٹر بھی ہیں کہا کہ سول سروس ایلومینائی بنانے کا مقصد یہی تھا کہ اس کٹھن وقت میں ایک دوسرے کا سہارا بناجائے۔ ہم اپنے پولیس کے جوانوں اور سویلین قربانیوں کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہیں۔انسپکٹرجنرل ریلوے پولیس منیر احمد چشتی نے ایک سیر حاصل لیکچر اس کی وجوہات اور اسباب پر دیااور زیرِ تربیت افسرا ن کا حوصلہ بڑھایاکہ آنے والا وقت بہتر ہوگا اوراس میں مزید بہتری آپ لوگ ہی لائیں گے۔ چیف ایگزیکٹو آفیسر پاکستان ریلویز محمد جاوید انور نے کہا کہ ہم اعادہ کرتے ہیں کہ متحد ہو کر یہ جنگ لڑیں گے اور آنے والی نسلوں کو بہتر پاکستان دے کر جائیں گے۔ ڈی آئی جی احمد مبین کا موقع پر موجود ہونا اُن کی فرض شناسی ، ڈسپلن اور احساسِ ذمہ داری کی دلیل ہے۔ اُنہوں نے زیرتربیت افسران کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ یہ رویہ آپ کیلئے بھی مشعلِ راہ ہے۔ جان آنی جانی چیز ہے۔ موت کمرے میں بھی آئے گی اور میدان میں بھی جس دھج سے شہداء نے اپنی جان کا نذرانہ دیا ہمیں اُس پر فخر ہے۔ تقریب کے اختتام پر شہداء کیلئے فاتحہ خوانی کی گئی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -