پی ٹی آئی دھڑے بندیوں کا شکار جہانگیر ترین اور شاہ محمود گروپ آمنے سامنے

پی ٹی آئی دھڑے بندیوں کا شکار جہانگیر ترین اور شاہ محمود گروپ آمنے سامنے
 پی ٹی آئی دھڑے بندیوں کا شکار جہانگیر ترین اور شاہ محمود گروپ آمنے سامنے

  

 لاہور(شہزاد ملک سے ) باوثوق ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف مختلف دھڑے بندیو ں کا شکار ہو گئی ہے اور اس وقت پی ٹی آئی کے اندر مختلف دھڑے بندیا ں ہو چکی ہیں اس وقت سب سے مضبوط اور بڑا دھڑا پارٹی کے سیکرٹری جنرل جہانگیر خان ترین‘عبدالعلیم خان ‘فواد چودھری کا کہا جاتا ہے جن کے ساتھ انصاف مرکز کے بھی اہم راہنما شریک ہو گئے ہیں جبکہ انہی کے دھڑے میں لاہور کے مضبوط ارکان اسمبلی اور بڑے نام جن میں رورل لاہورکے صدر ملک ظہیر عباس کھوکھر‘ ملک کرامت کھوکھر‘منشاء سندھو‘ شعیب صدیقی ‘ میاں محمد اسلم اقبال اور انصاف مرکز کے ڈاکٹر مراد راس‘ یاسر گیلانی سمیت دیگر شامل ہیں ۔دوسرا بڑا دھڑا پارٹی کے وائس چئیرمین مخدوم شاہ محمود قریشی کا کہا جاتا ہے جن کے ساتھ سابق گورنر چودھری محمد سرور ‘اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی میان محمود الرشید ترجمان پی ٹی آئی نعیم الحق اور دیگر شامل ہیں۔اسی طرح سے ایک دھڑا لاہور شہر کے صدر ولید اقبال کا کہا جاتا ہے انہوں نے پہلے انصاف مرکز بنا رکھا تھا لیکن ان کے ساتھ چھوڑ کر علیم خان گروپ میں چلے گئے ہیں اور اب ان کے ساتھ ایم این اے شفقت محمود ‘ڈاکٹر یاسمین راشد‘شیخ امتیاز اور حماد اظہر شامل ہیں ۔اسی طرح سے شعبہ خواتین میں بھی دو دھڑے بندیا ں ہیں ایک کی قیادت سلونی بخاری کرتی ہیں تو دوسرے دھڑے کی قیادت ایم پی اے نوشین حامد کرتی ہیں ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اسی طرح سے آئی ایس ایف اور یوتھ ونگ میں بھی دو دو دھڑے بندیاں چل رہی ہیں ۔

پی ٹی آئی /دھڑے بندیاں

مزید :

صفحہ اول -