فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کیا گیا تو صوبائی حکومت اپنے وسائل سے فنڈز فراہم کریگی:اسد قیصر

فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کیا گیا تو صوبائی حکومت اپنے وسائل سے فنڈز فراہم ...

  

صوابی(بیورورپورٹ)سپیکر خیبرپختونخوا اسمبلی اسدقیصر نے وفاقی حکومت سے فوری طور پر فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کرنے،دہشتگردی کے خلاف جنگ سے متاثرہ فاٹا کے عوام کیلئے بحالی کاپلان بنانے اور واراکانومی کو ریگولر اکانومی میں تبدیل کرنے کامطالبہ کرتے ہوئے کہاہے کہ فاٹا کو کے پی کے میں ضم کرنے صوبائی حکومت اپنی وسائل سے فنڈفراہم کرے گی لہٰذا 2018الیکشن سے قبل فاٹا کو کے پی کے میں ضم کیاجائے ۔ان خیالات کااظہارانہوں نے ڈسٹرکٹ یونین آف جرنلسٹس صوابی کی حلف وفاداری تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیاجبکہ اس موقع پر صدریونین احسان الحق بام خیلوی نے سپاسنامہ میں صوابی میں پریس کلب کے قیام سمیت صحافیوں کودیگر مسائل کے حل کامطالبہ کیا،چئیرمین یونین ہارون اعوان ،جنرل سیکرٹری عظمت خان ،خالد خان اور دیگر نے بھی خطاب کیاسپیکر اسدقیصر نے اس موقع پرڈسٹرکٹ یونین آف جرنلسٹس کیلئے پندرہ لاکھ روپے گرانٹ کااعلان کرتے ہوئے کہاکہ پریس کلب کے قیام کیلئے صوابی کی تمام صحافتی تنظیمیں ایک پیلٹ فارم پر متحدہوجائے تاکہ ان کے مسائل بہتر طریقے سے حل کئے جاسکے ۔انہوں نے کہاکہ اس وقت پوری دنیاکی دہشتگردی کی جنگ ہماری سرزمین پر لڑی جارہی ہے جس کی وجہ سے خیبرپختونخوا ،فاٹا اور صوبے کے دیگر علاقوں میں تمام گھریں،تعلیمی ادارے اور سارا انفراسٹرکچر تباہ ہوچکاہے قبائل بے گھر ہوگئے ہیں اور ان میں زیادہ تر فاٹا کے عوام متاثر ہوئے ہیں اس لئے وفاقی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ فاٹا کے عوام کے بحالی کیلئے عملی اقدامات اُٹھائے انہوں نے کہاکہ سی پیک کے حوالے سے ہمارا مؤقف بالکل واضح ہے کہ جب تک سی پیک کے حوالے سے ہمیں اطمینان نہ ہو اور ہمارا مطالبات پوری نہ ہو تب تک صوبائی حکومت کی طرف سے میں عدالت سے کیس نہیں لوں گا۔انہوں نے کہاکہ اس کیس اورزیدہ سٹی میں عمران خان کی کامیابی کے نتیجے میں چین کااعلیٰ وفد عمران خان کے ساتھ ملاقات کی اور عمران نے اس حوالے سے آگاہ کیا کہ وفاقی حکومت خیبرپختونخوا کے ساتھ سی پیک کے حوالے سے زیادتی کررہے ہیں اور یوں چین نے سی پیک کے پانچویں اجلاس میں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کو مدعو کیا۔انہوں نے کہاکہ اس منصوبے میں چارسدہ،نوشہرہ،مردان اور صوابی ریلوے ٹریک شامل ہونے کاعلاوہ چار ہزارکنال اراضی پر کرنل شیر انٹر چینج کے قریب ایک بڑی صنعتی زون قائم ہوگی لاہور پشاورریلوے ٹریک اپ گریڈکرنے کاعلاوہ ڈی آئی خان ریلوے ٹریک بھی شامل ہوگی۔انہوں نے کہاکہ ہم نے پہلی دفعہ سود کے خلاف قانون سازی کی جس کے تحت سودخوروں کیلئے دس لاکھ روپے جرمانہ اور دس سال قید کی سزا مقرر کی ہے صوبے میں این ٹی ایس ٹیسٹ کے ذریعے پچاس ہزار اساتذہ اور تین ہزار ڈاکٹرز بھر تی کئے گئے ہیں سرکاری سکولوں میں نرسری سے پانچویں پانچویں تک قرآن پاک کاناظرہ اور چھٹی جماعت سے ایف اے تک قرآن کاترجمہ بھی شروع کیاجائے گاصوابی کو گیس کی فراہمی کیلئے اقتدار میں آتے ہی متعلقہ محکمہ کے پاس جمع کرائی ہے لیکن وفاقی حکومت کی جانب سے اس میں روڑے اٹکائی جارہی ہے جس کے خلاف ہم نے عدالت سے رجوع کیاعدالتی فیصلہ ہمارے حق میں آنے کے باوجود اس پر عمل درآمد نہیں کررہی ہے ۔انہوں نے کہاکہ اگر صوابی بھر کر گیس کی فراہمی شروع نہیں کی گئی تو اسلام آباد پشاور موٹروے بند کرنے سمیت بھر پور احتجاج کریں گے #

مزید :

کراچی صفحہ اول -