الشیخ عمرعبدالرحمان کی مصر میں تدفین کی وصیت کا انکشاف

الشیخ عمرعبدالرحمان کی مصر میں تدفین کی وصیت کا انکشاف
الشیخ عمرعبدالرحمان کی مصر میں تدفین کی وصیت کا انکشاف

  

قاہرہ(این این آئی)امریکا میں دوران حراست انتقال کرنے والے مصرکے نابینا عالم دین الشیخ عمر عبدالرحمان کے صاحبزادے نے انکشاف کیا ہے کہ ان کے والد نے وصیت کی تھی کہ فوت ہونے کے بعد مجھے اپنے ملک مصر میں آبائی شہرہی میں دفن کیا جائے۔میڈیارپورٹس کے مطابق مرحوم الشیخ عمر عبدالرحمان کے بیٹے ابراہیم عمر عبدالرحمان نے کہا کہ ان کے والد نے قطر میں تدفین کی بات نہیں کی تھی بلکہ انہوں نے وصیت کی تھی اگر میری موت مصر سے باہر ہوئی تومجھے کسی دوسرے ملک میں دفن کرنے کے بجائے الدقھلیہ گورنری میں آبائی شہر الجمالیہ میں سپرد خاک کیا جائے۔ابراہیم نے بتایا کہ امریکی حکام نے ان کے خاندان سے رابطہ کرکے الشیخ عبدالرحمان کی وفات کی خبر دی۔ اس کے علاوہ سابق وزیر انصاف اور ان کے والد کے وکیل رمزی کلارک، فلسطینی وکیل اشرف النوبانی نے بھی ان کی وفات کی تصدیق کی ۔ فلسطینی وکیل اشرف النوبانی امریکا میں پابند سلاسل الشیخ عمر عبدالرحمان ، مصری حکام اور امریکی حکام سے بھی رابطے میں رہے ہیں۔ انہوں نے الشیخ عمر عبدالرحمان کی میت مصر منتقل کرنے کے حوالے سے بھی امریکا اور مصر کی حکومتوں سے رابطہ کیا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -