لعل قلندر کے بعد بھٹ شاہ کے مزار پر دہشت گردی کا خدشہ ،سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ، سندھ بھر میں دفعہ 144 نافذ

لعل قلندر کے بعد بھٹ شاہ کے مزار پر دہشت گردی کا خدشہ ،سیکیورٹی ہائی الرٹ کر ...
لعل قلندر کے بعد بھٹ شاہ کے مزار پر دہشت گردی کا خدشہ ،سیکیورٹی ہائی الرٹ کر دی گئی ، سندھ بھر میں دفعہ 144 نافذ

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سیہون میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر  ہونے والے خود کش حملے  کے بعد بھٹ شاہ کے مزار پر بھی دہشت گردی کے خدشے کے بعد  سیکیورٹی ہائی الرٹ جبکہ صوبائی  حکومت نے سندھ میں فوری طور پر 15  روز کیلئے دفعہ 144بھی نافذ کردی گئی ہے۔

مزید پڑھیں:پاک فوج کی بارڈر پار کارروائی،کالعدم تنظیموں کے تباہ ہونے والے کیمپس کی تصاویر منظر عام پر

نجی ٹی وی کے مطابق حساس اداروں نے سندھ کے عظیم صوفی شاعر شاہ عبدالطیف بھٹائی کے بھٹ شاہ میں واقع مزار پر دہشتگردی کا خدشہ ظاہرکرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ بھٹ شاہ کے مزار پر خودکش حملہ ہوسکتا ہے، رپورٹ میں اہم عمارتوں، سکولز، اورہسپتالوں کے بھی سیکیورٹی انتظامات سخت کرنے کی تجویز دی ہے۔صوبائی حکومت نے رپورٹ پر فوری ایکشن لیتے ہوئے بھٹ شاہ کے مزار پر سیکیورٹی بڑھادی ہےجبکہ کسی بھی ممکنہ خطرے سے نمٹنے کیلئے سندھ بھرمیں 15روز کیلئے دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی ہے، جس کے بعد صوبے میں جلسے اور ریلیاں نہیں نکالی جاسکیں گی۔دوسری جانب کراچی میں سول ایوی ایشن نے بھی سیکیورٹی انتظامات مزید سخت کرتے ہوئے اپنی ایس او پی بنا دی ہے اورادارے نے مسافروں سمیت دیگر شہریوں سے بھی تعاون کی اپیل کی ہے۔واضح رہے کہ سیہون میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر ہونے والے خود کش حملے کے بعد کراچی میں واقع عبداللہ شاہ غازی کے مزار سمیت شاہ عبدالطیف بھٹائی کے مزار کو بھی زائرین سے خالی کراتے ہوئے عارضی طور پر بند کر دیا گیا تھا ۔

مزید :

کراچی -