ناسا نے زمین پر نئی زندگی دریافت کرلی، دوسرے سیاروں پر مخلوق کی جانچ میں مدد مل سکتی ہے: ماہرین

ناسا نے زمین پر نئی زندگی دریافت کرلی، دوسرے سیاروں پر مخلوق کی جانچ میں مدد ...
ناسا نے زمین پر نئی زندگی دریافت کرلی، دوسرے سیاروں پر مخلوق کی جانچ میں مدد مل سکتی ہے: ماہرین

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن)سائنسدانوں کو زمین پر پائے جانے والے 60 ہزار سال پرانے دیو ہیکل کرسٹلز سے نئی زندگی کا سراغ ملا ہے جس کے بعد سائنسدان اس قابل ہوگئے ہیں کہ وہ پتا لگا سکیں کہ مریخ پر پائی جانے والی زندگی کیسی ہوگی۔

برطانوی اخبار ڈیلی مرر کی رپورٹ کے مطابق یہ زندہ مخلوق میکسیکو میں بڑی غار میں موجود کرسٹل سے امریکی خلائی تحقیقاتی ادارے ناسا نے دریافت کی ہے ۔یہ انتہائی چھوٹی مخلوق جو عام آنکھ سے نظر نہیں آتی غار میں موجود پانچ میٹر لمبے کرسٹل سے ملی ہے اور ان کی تعداد 100 کے قریب ہے۔ یہ چھوٹی مخلوق بغیر آکسیجن کے کرسٹل کے اندر زندہ ہے اور دریافت ہونے والے ان مائیکروبز میں سے 90 فیصد پہلی دفعہ دریافت ہوئے ہیں۔امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ یہ مخلوق دریافت ہونے کے بعد سائنسدانوں کو یہ سمجھنے میں بڑی مدد مل سکتی ہے کہ آکسیجن کے بغیر دوسرے سیاروں پر زندگی کیسے برقرار رہتی ہوگی۔

واضح رہے کہ ان غاروں میں درجہ حرارت 60 ڈگری سینٹی گریڈ سے بھی اوپر چلا جاتا ہے جبکہ سائنسدانوں نے پہلے بھی یہاں زندگی کے شواہد اکٹھے کرنے کی کوشش کی تھی لیکن انہیں اس کام میں کامیابی نہیں مل سکی جس کے بعد سائنسدانوں نے اسے جہنم سے تشبیہہ دیتے ہوئے چھوڑ دیا تھا۔

ناسا کے تحقیق کاروں نے اس غار میں جانے کیلئے خلا میں پہنے جانے والے لباس زیب تن کیے تھے جس کے باعث وہ اتنی دیر تک اتنے زیادہ درجہ حرارت میں کام کرنے کے قابل ہو سکے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -