دو افراد نے 19 سالہ لڑکی کو ٹول پلازے پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا لیکن جاتے ہوئے وہاں کیا چیز چھوڑ گئے ؟ افسوسناک خبر

دو افراد نے 19 سالہ لڑکی کو ٹول پلازے پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا لیکن جاتے ...
دو افراد نے 19 سالہ لڑکی کو ٹول پلازے پر جنسی زیادتی کا نشانہ بنا دیا لیکن جاتے ہوئے وہاں کیا چیز چھوڑ گئے ؟ افسوسناک خبر

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں دو عاقبت نااندیش مردوں نے ایک لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور پھر ایسی غلطی کر دی کہ اگلے چند گھنٹوں میں ہی پولیس ان تک پہنچ گئی اور گرفتار کر لیا۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق متاثرہ 19سالہ لڑکی اپنے شوہر کے ساتھ بس میں سفر کر رہی تھی۔ رات 11بجے جب بس ریاست ہریانہ کے شہر کرنال کے ٹول پلازے پر رکی تو دونوں میاں بیوی بس سے اتر گئے۔ انہیں ان کے کرنال کے رہائشی کسی رشتہ دار نے فون کرکے رکنے کو کہا تھا، وہ انہیں کوئی سامان دینا چاہتا تھا۔ دونوں میاں بیوی ٹول پلازے پر اس رشتہ دار کا انتظار کرنے لگے۔ اسی دوران خاتون وہاں واش روم چلی گئی۔جب وہ واش روم سے باہر نکلی تو باہر دو مرد کھڑے تھے جنہوں نے چاقو دکھا کر اسے دھمکایا اور قریب واقع ایک انڈرپاس میں لے گئے۔

رپورٹ کے مطابق انڈرپاس میں دونوں ملزمان نے لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور جاتے ہوئے لڑکی کو اپنے فون نمبر دے گئے تاکہ لڑکی ان سے دوبارہ ملنے کے لیے رابطہ کر سکے۔رپورٹ کے مطابق لڑکی نے واپس آ کر اپنے شوہر کو حقیقت بتائی جواسے لے کر پولیس سٹیشن چلا گیا اور لڑکی نے وہ فون نمبرز پولیس کو دے دیئے۔ پولیس نے ان نمبروں کی مدد سے ملزمان کی شناخت کر لی اور چند گھنٹے میں ہی ملزم حوالات میں موجود تھے۔ واضح رہے کہ اس میاں بیوی کا تعلق ریاست پنجاب سے تھا اور وہ پانی پت میں اپنے رشتہ داروں سے مل کر واپس آ رہے تھے۔

مزید : بین الاقوامی