قیامت کی نشانی ، 30 سالہ شخص نے 5 ماہ کی بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

قیامت کی نشانی ، 30 سالہ شخص نے 5 ماہ کی بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا
قیامت کی نشانی ، 30 سالہ شخص نے 5 ماہ کی بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت سے خواتین کے ساتھ جنسی زیادتیوں کی خبریں تواتر کے ساتھ آتی رہتی ہیں لیکن اب ایک ایسی خبر آ گئی ہے کہ سن کر انسانیت شرم سے پانی پانی ہو جائے۔ دی سن کے مطابق بھارتی ریاست بہار کے ضلع اورنگ آباد میں واقع ایک گاﺅں میں ایک 30سالہ بدبخت نے 5ماہ کی بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا ہے، جس سے بچی کی موت واقع ہو گئی۔ یہ شیطان صفت انسان بچی کا کزن تھا اور اس نے شادی کی ایک تقریب میں یہ درندگی کی۔

رپورٹ کے مطابق اس درندے نے بچی کی ماں سے بچی کو لیا اور لے کر باہر چلا گیا۔ جب دو گھنٹے تک وہ واپس نہیں آیا تو بچی کے والدین کو فکر لاحق ہوئی اور تلاش شروع کی گئی۔ شادی میں شریک لگ بھگ سبھی مہمان بچی اور اس کے کزن کی تلاش میں لگ گئے۔ کئی گھنٹے گزر گئے لیکن دونوں کا کچھ پتہ نہ چلا۔ پھر گاﺅں کے کچھ لوگوں نے انہیں بتایا کہ انہوں نے کھیتوں میں لڑکے کو بچی کے ساتھ لیٹے ہوئے دیکھا تھا اور بچی بے حس و حرکت پڑی تھی۔

بچی کے والدین اور دیگر لوگ بھاگے بھاگے اس جگہ پر پہنچے تو وہاں بچی خون میں لت پت بے ہوش پڑی تھی۔ وہ اسے اٹھا کر ہسپتال لے گئے جہاں ڈاکٹروں نے بچی کی موت کی تصدیق کر دی۔ بچی کے پوسٹ مارٹم کے بعد پتا چلا کہ اس کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی تھی۔ رپورٹ کے مطابق پولیس نے ملزم کو گرفتار کر کے اس کے خلاف بچی کے اغوائ، جنسی زیادتی اور قتل کے مقدمات درج کر لیے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /بین الاقوامی