بھارت مقبوضہ کشمیر میں اصل حقیت چھپانا چاہتا ہے: ترجمان دفترخارجہ

بھارت مقبوضہ کشمیر میں اصل حقیت چھپانا چاہتا ہے: ترجمان دفترخارجہ
بھارت مقبوضہ کشمیر میں اصل حقیت چھپانا چاہتا ہے: ترجمان دفترخارجہ
سورس: ٖFile

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ترجمان دفترخارجہ زاہد حفیظ نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں 05  اگست سے فوجی محاصرہ جاری ہے ۔بھارت ایک مرتبہ پھر دہلی میں موجود غیر ملکی سفارتکاروں کو مقبوضہ کشمیر کے دورے کرا رہا ہے۔ بھارت ایسے اقدامات کے ذریعے مقبوضہ کشمیر کی اصل حقیقت چھپانا چاہتا ہے ۔

ترجمان دفتر خارجہ نے صحافیوں کو ہفتہ وار بریفنگ میں کہا کہ بھارت دہلی میں موجود سفارتکاروں کو مقبوضہ کشمیر کے دورے کرانے اور وہاں پر صورتحال کو معمول پر ظاہر کرنے کا ڈھونگ رچا رہا ہے۔ ماضی میں بھی بھارت نے ریٹائرڈ فوجیوں کو کشمیری عوام کے طور پر دنیا کے سامنے پیش کیا جس پر سخت تنقید ہوئی۔ 

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ سکھ یاتری اپنی مذہبی رسومات کے سلسلے میں پاکستان آنا چاہتے ہیں بھارت سکھ یاتریوں کے دورہ پاکستان میں رکاوٹ ڈالنے کے بجائے سہولیات فراہم کرے ۔ کرتارپور راہداری کھولنے میں بہت سے چیلنجز کے باوجود پاکستان نے اسے مکمل کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ کورونا وبا کے باوجود اتنی بڑی تعداد میں شرکت نے پاکستان مخالف بھارتی پروپیگنڈا کو شکست دے دی ہے ۔

مزید :

قومی -