سینٹ ویڈیوکیس، وزارتی تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے پیش نہیں ہوں گے، عبیداللہ مایار 

سینٹ ویڈیوکیس، وزارتی تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے پیش نہیں ہوں گے، عبیداللہ ...

  

مردان (بیورورپورٹ) سابق رکن صو بائی اسمبلی عبید اللہ مایار نے کہاہے کہ وہ سینٹ ویڈیو کیس کے وزارتی تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے پیش نہیں ہوں گے کمیٹی میں شامل شہزاد اکبر پر خود کرپشن کے الزامات ہیں وفاقی وزیر فواد چودھری ان پر الزامات لگانے سے قبل اپنے گریبان میں جھانک کر دیکھیں حدود سے تجاوز نہ کریں اور بازاری زبان کے استعمال سے گریز کریں یہاں اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ وفاقی وزیر فواد چودھری نے ان کے بارے میں انتہائی بے ہودہ او رنامناسب زبان استعمال کی ہے لگائے گئے الزامات میں کوئی حقیقت نہیں میں نے اپنی جماعت کے امیدوار کو ووٹ دیاہے جس کے ثبوت موجود ہیں اور وقت آنے پر سامنے لائیں گے انہوں نے کہاکہ 2018کے سینٹ انتخابات کے ساتھ ساتھ 2015کی سینٹ الیکشن کی تحقیقات ہونی چاہئے کہ پیپلز پارٹی کے ایک او رمسلم لیگ (ن) کے دو امیدوار کیسے کامیاب ہوئے عبیداللہ مایار نے کہاکہ یہ ویڈیو اگر موجود تھی تو سابق وزیر قانون تین سال تک کیسے وزارت کے مزے لوٹتے رہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ منظر عام پر آنے والے ویڈیو کا فرانزک اور عدالتی تحقیقات کرائی جائے تاکہ دودھ کا دود ھ او رپانی کا پانی ہوجائے انہوں نے الزام عائد کیاکہ وزیر دفاع پرویزخٹک او رسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اس تمام معاملے میں براہ راست ملوث ہیں لیکن تحقیقاتی کمیٹی نے تحقیقات شروع کرنے سے قبل ہی انہیں کلین چٹ دے دی ہے انہوں نے کہاکہ عدالتی تحقیقات کے ذریعے اصل حقائق منظر عام پر لائے جائیں 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -