چارسدہ میں غیر انسانی سلوک، صحافی پر تشدد، غیر اخلاقی ویڈ یو بنائی 

  چارسدہ میں غیر انسانی سلوک، صحافی پر تشدد، غیر اخلاقی ویڈ یو بنائی 

  

چارسدہ (بیورورپورٹ)چارسدہ میں انسانیت سوز واقعہ۔ مسلح افراد نے دن دہاڑے سینئر صحافی سیف اللہ جان کو سرڈھیری بازار سے اغواء کرکے سرعام بازار میں گھسیٹ کر غیر انسانی تشدد کا نشانہ بنا کر تحریک انصاف کے دفتر میں بند کرکے غیر اخلاقی ویڈیو بنائی۔ڈی پی او چارسدہ نے ملزمان کی گرفتاری کے احکاما ت جاری کر دئیے۔ تفصیلات کے مطابق چارسدہ پریس کلب کے گورننگ باڈی کے ممبر سینئر صحافی اے پی پی اور روزنامہ اسلام کے نمائندے سیف اللہ جان کو سرڈھیری میں مسلح ملزمان عبداللہ، افتخار، فہیم پسران زید اللہ، سعادت، شیر علی پسران نامعلوم اور دیگر متعدد نامعلوم مسلح افراد نے سرڈھیری چوک میں واقع سیف بیکر ی سے دن دہاڑے اغواء کیا اور سڑک پر گھسیٹتے ہوئے تحریک انصاف کے مقامی دفتر لے گئے جہاں پر مغوی کو کمرے میں بند کر دیا گیا۔ مسلح ملزمان کی دہشت کی وجہ سے جائے وقوعہ اور بازار میں موجود لو گ بے بسی سے تماشہ دیکھتے رہے۔سفاک ملزمان نے اسلحہ کی نوک پر صحافی سیف اللہ جان کو بے بس کرکے بند کمرے میں مزید تشدد کا نشانہ بنا کر غیر اخلاقی ویڈیو بناء کر سنگین نتائج کی دھمکیاں دی۔ اس حوالے سے صحافی سیف اللہ جان کا موقف ہے کہ کچھ عرصہ پہلے بھی مذکورہ ملزمان نے ان کو تشدد کا نشانہ بنایا جس پر انہوں نے تھانہ سرڈھیری میں رپورٹ درج کر ائی اور پولیس انکوائری مکمل ہونے کے بعد بااثر ملزمان کے خلاف گزشتہ روز ایف آئی آر درج ہوئی جس پر طیش میں آکر انہوں نے بدلہ لیا۔ سرڈھیری پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمات درج کرکے ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دئیے۔ واقعہ کے حوالے سے ڈی پی او چارسدہ محمد شعیب خان کا موقف تھا کہ ملزمان کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے اور تمام ملزمان بہت جلد قانون کے کٹہرے میں ہونگے۔ یا د رہے کہ مرکزی ملزم عبداللہ تحریک انصا ف چارسدہ کے ضلعی رہنماء اور اس کا بھائی ضلعی زکواۃ کمیٹی کے چیئرمین ہے۔  

مزید :

پشاورصفحہ آخر -