بھار ت کاسکھ یاتریوں کو روکنا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے،سردار ستونت

بھار ت کاسکھ یاتریوں کو روکنا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے،سردار ستونت

  

لاہور(فلم رپورٹر)پاکستان سکھ گورو دوار پر بندھک کمیٹی کے پردھان سردارستونت سنگھ نے کہا ہے کہ بھارت نے  ''ساکا'' کے موقع پر سکھ یاتریوں کو روک کر انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی کی۔ تقریبات کے لیے حکومت پاکستان کے احکامات کے مطابق متروکہ وقف املاک بورڈ نے بہترین انتظامات کر رکھے تھے،پاکستان میں اقلیتوں سے محبت جبکہ بھارت میں کھلے عام ظلم ہو رہا ہے انسانی حقوقی کی عالمی نتظیمیں اسکا نوٹس لیں جبکہ بھارتی رویہ کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔یہ باتیں انہوں نے گورو دوارہ ڈیرہ صاحب میں PSGPC کے جنرل سیکرٹری سردار امیر سنگھ،سردار اندرجیت سنگھ او ر سردار وقاش سنگھ نے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہیں۔

انکا کہنا تھا کہ ہم وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے بے حد شکر گزار ہیں کہ انہوں نے شرومنی گورو دوارہ پر بندھک کمیٹی دہلی کی درخواست پر ساکا کی تقریبات کو یادگار بنانے کے لیے خصوصی طور ہدایات جاری فرمائیں۔انہوں نے کہا کہ یاتریوں کے لیے  انتظامات کرنے پر چیئرمین بورڈ ڈاکٹر عامر احمد کے بھی شکر گزار ہیں۔انکا کہنا تھا کہ بھارت سکھوں کے ساتھ ناروا سلوک کر کے مزید بدنام ہو رہا ہے جبکہ بھارت کے اس عمل نے 1920کی یاد تازہ کردی۔ جنرل سیکرٹری سردا ر امیر سنگھ نے کہا کہ بھارت نے جھوٹے حیلے بہانے بنا کر 720یاتریوں کو روکا جبکہ پاکستان نے تقریبات کے لیے انتظامات مکمل کر رکھے تھے،ٹرسٹ بورڈ چیئرمین کے سہولیات کے لیے اقدامات کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے۔بھارت کے کشمیریو ں اور سکھوں کے ساتھ ناروا سلوک پرہم بھارتی رویہ کی بھر پور مذمت کرتے ہیں۔ سابق پردھان سرادار بشن سنگھ،ہندو رہنماء ڈاکٹرمنور چان نے دیگر سکھ رہنماؤں کے ہمراہ مذہبی تقریبات کی ادائیگی پر پاکستان آنے سے روکنے پر بھارتی رویہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے عالمی تنظیموں سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا اور حکومت پاکستان اور میڈیا نمائندوں کا شکریہ اداکیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -