6سے 15لاکھ افراد کے حج کی تجویز خادم حرمین الشریفین کو منظوری کیلئے پیش

6سے 15لاکھ افراد کے حج کی تجویز خادم حرمین الشریفین کو منظوری کیلئے پیش

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 لاہور(ڈویلپمنٹ سیل) عمرہ اور حج کی بندش عالمِ اسلام کا دباؤ سعودی عرب پربڑھنے لگا، سعودی وزارت الحج نے حج 2021ء کیلئے خاد م حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز کو ایس او پیز کے مطابق 6لاکھ 9لاکھ 12لاکھ افراد کے حج2021ء کرنے کی تجاویز منظوری کے لیے پیش کر دی دوسرے ذرائع کے مطابق 9لاکھ 12لاکھ15لاکھ افراد کو اجازت دینے کی درخواست کی گئی ہے امت مسلمہ عمرہ اور حج بند ہونے کی وجہ سے شدید اضطراب کا شکارہے مرکز توبہ حرمین شریفین کی بندش کو اللہ کی آزمائش سمجھا جا رہا ہے معلوم ہوا ہے سعودی وزارت الحج نے رمضان میں عمرہ کھولنے اور حج 2021ء کیلئے تجاویز منظوری کیلئے شا ہ سلمان کو بھیج دیں ہیں۔ موسسہ جنوب ایشیاء جو ہمارے خطے میں سرکاری اور پرائیویٹ حج کرانے کا ذمہ دار ہوتا ہے وہ خاموش ہے ان کا کہنا ہے حج 2021ء کے حوالے سے ابھی کوئی فیصلہ نہیں ہوا رمضان میں عمرہ کتنا ہوتا ہے کن ممالک کو کتنی اجازت ملتی ہے اس کا بھی فیصلہ ہونا باقی ہے یہ بھی معلوم ہوا ہے پاکستان کی وزارت الحج بھی سعودی وزارت الحج سے رابطے میں ہے اور اپنے طور پر حج کی تیاریاں کر رہی ہے ہنگامی طور پر بھی اگر سعودی حکومت اگر اعلان کرتی ہے پاکستان تیا ر ہے روزنامہ پاکستان کو پتہ چلا ہے سعودی حکومت دینا بھر کے تمام ممالک میں کورونا کی دوسری اور تیسری لہر کے حوالے سے جائزہ لے رہا ہے ڈبلیو ایچ اوکی رپورٹ کی روشنی میں تجاویز مرتب کر رہا ہے 15مارچ کے بعد ساری صورتحال سامنے آئے گی ایک بات تو طے ہے محدود حج ہو گا کون سے ممالک شریک ہو سکیں گے اس پر بات ہو رہی ہے۔ گزشتہ سال 1000افراد حج کی سعادت حاصل کر سکے تھے ان کا تعلق سعودی خاندانوں سے تھا دنیا بھر سے کسی ملک کو اجازت نہیں دی گئی تھی۔ 
حج

مزید :

صفحہ آخر -