پیف پارٹنر سکولوں کی فیس میں اضافہ‘ ملازمین مستقل کرنے کا فیصلہ

 پیف پارٹنر سکولوں کی فیس میں اضافہ‘ ملازمین مستقل کرنے کا فیصلہ

  

ملتان (خصوصی رپورٹر) پیف نے پارٹنر سکولوں کی فیس  میں اضافہ اور ملازمین کو بھی مستقل کرنے کافیصلہ تفصیل کے مطابق پنجاب ایجوکیشن فاونڈیشن  کے  بورڈ آف ڈائریکٹرز کا 74واں اہم اجلاس ہوا جس کی صدارت  چئیرمین ز سردار آفتاب اکبر خان نے کی۔ ایم ڈی پیف اسد نعیم نے بورڈ ممبران کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پارٹنر سکولز بہت کم پیسوں (بقیہ نمبر27صفحہ 6پر)

میں غریب اور مستحق بچوں کو معیاری تعلیم فراہم کر رہے ہیں تاہم کچھ مسائل اور فنانس ڈیپارٹمنٹ (گورنمنٹ آف پنجاب) کی طرف سے فنڈز جاری نہ ہونے کی وجہ سے تین ماہ کی فنڈنگ جاری نہیں کی جاسکی جبکہ پارٹنر سکولوں کے بقایا جات بھی ادا کیے جانے ہیں۔ایم ڈی پیف نے بورڈ ممبران سے درخواست کی کہ بورڈممبر ان فنڈنگ کے معاملات کو سمجھتے ہوئے بقایا جات ادا کرنے کی اجازت دے جبکہ فنانس ڈیپارٹمنٹ پیف کو جلد از جلد پانچ ارب کے فنڈز جاری کرے تاکہ سکولوں کی فنڈنگ جاری کی جا سکے۔اس موقع پر چیئرمین پیف سردار آفتاب اکبر خان نے کہا کہ 6سال سے پارٹنر سکولوں کی فیس نہیں بڑھی جبکہ مہنگائی کی شرح میں اضافہ ہوا انہو ں نے کہا کہ فیس کم ہونے کی وجہ سے پیف سکولوں میں اساتذہ کی تنخواہیں بھی نہیں بڑھائی جا رہیں جب کہ پیف سکولوں کے اساتذہ بہترین رزلٹ دے رہے ہیں۔بورڈ ممبران نے چیئرمین پیف کی 50روپے پرائمری اور100روپے ایلیمنٹری لیول فی بچہ  فیس بڑھانے کی تجویز سے اتفاق کرتے ہوئے معاملہ فنانس کمیٹی میں بھیجنے کا فیصلہ کیا اور فیس بڑھانے کا ایجنڈا اگلی بورڈ میٹنگ میں پیش کرنے کی ہدایات جاری کیں۔ ایم ڈی پیف نے کہا کہ ریجنل دفاتر کے دائرہ کار کو بڑھانے سے جنوبی اور شمالی پنجاب کے پارٹنرزکو لاہور ہیڈآفس آنے کی سفری مشقت سے بچایا جا سکے گا اور ان کے مسائل متعلقہ ریجنل دفاتر سے ہی حل ہو جائیں گے۔ میٹنگ میں ڈائریکٹر فنانس زبیدالحسن نیبتایا کہ پیف کے اکاونٹ میں مو جود رقم پیف پارٹنرز کے بقایا جات دینے کے لیے ناکافی ہے جبکہ پیف پارٹنرز کو نومبر  2020سے فنڈز کی ادائیگی بھی نہیں کی گئی۔ انہوں نے ایم ڈی پیف اسد نعیم کی تایئد کرتے ہوئے کہا کہ فنانس ڈیپارٹمنٹ سے فنڈز ملتے ہی پارٹنر سکولوں کی ادائیگیاں کر دی جائیں گی۔ میٹنگ میں ڈائریکٹر آئی ٹی محمد شعیب نے کہا کہ پیف نے 23لاکھ سے زائد بچوں کا نادرا کے ذریعے تصدیق کا عمل مکمل کر لیا ہے ا آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ ایک بائیومیٹرک اپلی کیشن کا پائیلٹ فیز متعارف کروانے جا رہا ہے جس کے ذریعے آفس سے ہی پارٹنر سکولوں میں ٹیچر ز اور بچوں کی حاضری دیکھی جا سکے گی اور اس سے مانیٹرنگ کے حوالے سے اخراجات میں بھی بہت کمی آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ پیف ملازمین 10سے15سال سے پیف کے لیے انتہائی محنت سے کام کر رہے ہیں اس لئے پیف ملازمین کے لیے بھی ویلفئیرکے پروگرامز متعارف کرانے چاہییں ملازمین کی مستقلی کے حوالے سے بو ورکنگ پیپر تیار کرنے کی ہدایت دی ۔

پیف

مزید :

ملتان صفحہ آخر -