کنٹریکٹر ز نے پشاور بی آر ٹی اور تین میگا شاپنگ پلازوں پر کام کرنے سے انکار کر دیا ، حیران کن خبر آ گئی 

کنٹریکٹر ز نے پشاور بی آر ٹی اور تین میگا شاپنگ پلازوں پر کام کرنے سے انکار کر ...
کنٹریکٹر ز نے پشاور بی آر ٹی اور تین میگا شاپنگ پلازوں پر کام کرنے سے انکار کر دیا ، حیران کن خبر آ گئی 

  

پشاور (ڈیلی پاکستان آن لائن )بس ریپڈ ٹرانزٹ کے باقی ماندہ تعمیراتی کام پر نیا تنازع کھڑا ہو گیاہے کیونکہ کنٹریکٹر نے کام کرنے سے انکار کر دیاہے ۔

نجی ٹی وی جیونیوز کی رپورٹ کے مطابق کنٹریکٹرز نے بی آرٹی روٹ پشاور اور تین میگا شاپنگ پلازوں پرکام سے انکار کردیا ہے جس کے باعث تینوں بس ڈپوز پر کئی ماہ سے کام تعطل کا شکار ہے۔پشاور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی نے شاپنگ پلازوں کی تعمیرکے لیے کنٹریکٹرز تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور ایشیائی ترقیاتی بینک نے کام سب کنٹریکٹرزکو دینے کی منظوری بھی دے دی ہے۔

پشاور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ معاملے کو خوش اسلوبی سے حل کرلیا ہے اور سب کنٹریکٹرپرانے ریٹس پر ہی باقی ماندہ کام مکمل کریں گے جب کہ بقایاجات کا مسئلہ حل کرنے کے لیے کمیٹی بنا دی ہے۔دوسری جانب کنٹریکٹر کا کہنا ہے کہ پی ڈی اے نے 5 ارب 17کروڑ روپے کے بقایاجات روک رکھے ہیں اور بلوں کی کٹوتی کی مد میں بھی ساڑھے تین ارب روپے واجب الادا ہیں۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -