نوشہرہ پی کے 63،  تحریک انصاف کو 2013 کے بعد پہلی بار شکست کا سامنا،ہار کی ممکنہ وجہ بھی سامنے آگئی

نوشہرہ پی کے 63،  تحریک انصاف کو 2013 کے بعد پہلی بار شکست کا سامنا،ہار کی ممکنہ ...
نوشہرہ پی کے 63،  تحریک انصاف کو 2013 کے بعد پہلی بار شکست کا سامنا،ہار کی ممکنہ وجہ بھی سامنے آگئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نوشہرہ(ڈیلی پاکستان آن لائن )پی کے 63 نوشہرہ میں وزیردفاع  پرویز خٹک اور ان کے بھائی لیاقت خٹک کے درمیان اختلافات کی وجہ سے تحریک انصاف کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعلی خیبر پختونخوا پرویز خٹک کا تعلق نوشہرہ سے ہے اور وہ اپنے علاقے میں کافی اثر ورسوخ رکھتے ہیں۔پی کے 63 کے حلقہ سے 2013  اور 2018 کے عام انتخابات  میں  تحریک انصاف واضح مارجن سے جیت گئی تھی۔کورونا وائرس کے باعث تحریک انصاف کے رکن اسمبلی میاں جمشید کی وفات کے بعد ٹکٹ ان کے بیٹے محمد عمر کو دیا گیا تو پرویز خٹک کے بھائی اور رکن کے پی اسمبلی  لیاقت خٹک نے اس پر اعتراض کیا وہ یہ ٹکٹ اپنے بیٹے کو دلوانا چاہتے تھے۔
بیٹے کو ٹکٹ نہ ملنے پر لیاقت خٹک نے تحریک انصاف کے امیدوار کی سپورٹ نہیں کی اور وہ ان کے کسی جلسے میں شریک نہیں ہوئے۔دوسری جانب ضمنی انتخاب میں پیپلز پارٹی اور جمیت علما اسلام کی جانب سے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے امیدوار کی سپورٹ بھی اہم ثابت ہوئی۔

مزید :

قومی -