اگر اپنے بچوں کو ایماندار بنانا چاہتے ہیں تو یہ ایک کام کبھی نہ کریں، سائنسدانوں نے ایسی بات بتادی جس پر عمل کرنا پاکستانی والدین کیلئے ناممکن ہے

اگر اپنے بچوں کو ایماندار بنانا چاہتے ہیں تو یہ ایک کام کبھی نہ کریں، ...
اگر اپنے بچوں کو ایماندار بنانا چاہتے ہیں تو یہ ایک کام کبھی نہ کریں، سائنسدانوں نے ایسی بات بتادی جس پر عمل کرنا پاکستانی والدین کیلئے ناممکن ہے

  

لندن(نیوزڈیسک) اگر بچے کوئی غلطی کریں تو والدین ان پر چڑھ دوڑتے ہیں اور ان کی خوب تواضع بھی کرتے ہیں لیکن ایک حالیہ تحقیق میں ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ ایسا کرنے سے آپ اپنے بچے کو ایمانداری سے دور لے جاتے ہیں۔

’اگر آپ اپنا یہ سب سے زیادہ پسندیدہ کام کرنا چھوڑ دیں تو زندگی میں کئی سال اضافہ ہوسکتا ہے‘ سائنسدانوں نے لمبی عمر کا ایسا راز بتادیا کہ جان کر آپ پریشان ہوجائیں گے

ڈیلی میل نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ بچے اس وقت زیادہ ایماندارانہ رویہ اپناتے ہیں جب ان کے والدین مثبت طریقے سے رد عمل دیں۔یونیورسٹی آف مشی گن نے تحقیق کاروں نے اس بات کا کھوج لگانے کی کوشش کی کہ جب بچے کوئی غلطی کرتے ہیں تو وہ کیا سوچتے ہوئے رد عمل کرتے ہیں۔ تحقیق میں ماہرین نے بچوں کو کچھ ایسے سوالات اور صورتحال سے دوچار کیا اور ان کا ردعمل جاننے کی کوشش کی۔ تحقیق کار ڈاکٹر کریگ سمتھ کا کہنا ہے کہ یہ بات معلوم ہوئی کہ اگر والدین بچوں کے ساتھ مثبت طریقے سے پیش آئیں تو اس بات کا قوی امکان ہوتا ہے کہ بچے جھوٹ نہیں بولیں گے۔اس کا کہنا تھاکہ کم عمر کے بچوں میں جھوٹ بولنے کا امکان کم تھا۔”چار اور پانچ سال کے بچوں میں مثبت سوچ اور سچ بولنے کا رجحان تھاجبکہ سات سے نو سال کے درمیان کے بچوں کو اس بات کا اچھی طرح ادراک ہوا کہ جھوٹ بولنا ایک بری بات ہے۔“ اس کا کہنا تھا کہ جب بچوں کو یہ علم ہو کہ انہیں کچھ غلط کرنے پر کوئی سخت رویے کا سامنا ہوگا تو وہ جھوٹ کی طرف مائل ہوتے ہیں لیکن اگر انہیں غلط کام کرنے پر سکون کے ساتھ سمجھایا جائے تو وہ مثبت سوچ کے ساتھ سچ بولنے کی طرف مائل ہوتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس