بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی توسیع

بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی توسیع

صدر مملکت ممنون حسین نے اس بات پر زور دیا ہے کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو دور افتادہ اور پسماندہ علاقوں تک توسیع دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس پروگرام کے ذریعے مستحق اور ضرورت مند افراد کو اپنے پاؤں پر کھڑا ہونے میں مدد دینے کے لئے تعلیم اور ہنر کی سہولتیں مہیا کرنے کی ضرورت ہے۔ صدر ممنون حسین نے ان خیالات کا اظہار بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام اسلام آباد کی جائزہ رپورٹ کے حوالے سے منعقد ہونے والی خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صدر ممنون حسین نے جن باتوں پر زور دیا ہے، وہ ضرورت مند، مستخق اور بے وسیلہ لوگوں کے حالات کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرسکتی ہیں۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام اپنی افادیت کے حوالے سے ایک مفید اور مدد گار پروگرام ثابت ہو چکا ہے۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو دور افتادہ اور پسماندہ علاقوں تک توسیع دینے سے ان لوگوں کی بھی مالی مدد ممکن ہوگی، جنہیں ابھی تک اس پروگرام میں بوجوہ شامل نہیں کیا جاسکا۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ صدر مملکت کی اس رہنمائی کو فوری اہمیت دیتے ہوئے اس پروگرام کی توسیع کو جلد یقینی بنایا جائے۔ اس کے علاوہ اس پروگرام میں شامل افراد کو تعلیم اور ہنر مندی کے ذریعے بھی اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کے لئے مربوط پروگرام پر توجہ دی جائے۔ یہی اس پروگرام کا بنیادی مقصد بھی ہے ۔ خصوصاً خواتین کو خود اعتمادی کے ساتھ اپنی اور اپنے خاندان کی زندگی میں بہتری لانے میں یہ پروگرام مددگار ثابت ہو رہا ہے۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کی چیئرپرسن ماروی میمن کا یہ کہنا اطمینان بخش ہے کہ اس پروگرام کو مختلف عالمی اداروں (عالمی مالیاتی فنڈ، ورلڈ بینک سمیت) کی طرف سے سراہا گیا ہے، خاص طور پر اس پروگرام پر عملدرآمد کے طریق کار کی تعریف کی جاتی ہے ۔ اس کی توسیع ہونے سے اس پروگرام کی افادیت یقیناًبڑھ جائے گی۔

مزید : اداریہ