مغلپورہ ، اجتماعی بد اخلاقی کی شکار ، خاتون کو انصاف نہ مل سکا ، وادی کیلئے دفتر پاکستان پہنچ گئی

مغلپورہ ، اجتماعی بد اخلاقی کی شکار ، خاتون کو انصاف نہ مل سکا ، وادی کیلئے ...

 لاہور (اپنے کرا ئم ر پو رٹر سے) مغل پو ر ہ کے علاقہ میں اجتما عی بد اخلاقی کا شکا ر ہو نے والی خاتون پو لیس کی جا نب سے ا نصا ف نہ ملنے پردادرسی کے لئے د فترروزنامہ ’’ پا کستا ن‘‘ پہنچ گئی ۔ متا ثر ہ خاتو ن مسر ت بی بی کا کہنا تھا کہ وہ لال پل کی ر ہا ئشی ہے اور اپنی بہن کے گھر ر ہا ئش پز یر ہے ۔ متا ثر ہ خاتون کے مطا بق نو کر ی کا جھا نسہ د ے کر ملزم شاہد اور افتخا ر نے اسے جو س میں بیہوشی کی دواپلا ئی اور اپنے دوست کے ڈیرے پر لے جا کر اجتما عی بد اخلا قی کا نشانہ بنا یا اور فرا رہو گئے ۔ خاتون کی در خواست پر پو لیس نے مقد مہ نمبر 942\16 در ج کر لیا۔پو لیس نے ملزم شاہد کو گرفتا ر کیا تو اس نے اپنے د یگر ساتھیو ں افتخا ر ، خلیل ، ببل سائیں وغیر ہ کا نا م بھی بتا یا ۔ خاتون کے مطا بق پو لیس نے افتخا ر کو حراست میں لے لیا ہے لیکن گرفتا ر ی نہیں ڈا ل ر ہی ہے اور تھا نہ میں اسے پرو ٹو کو ل د یا جا ر ہا ہے ۔ متا ثر ہ خاتون نے الزا م عا ئد کیا ہے کہ انچا ر ج انویسٹی گیشن مغل پور ہ نواز چیمہ بھی نازیبا الفا ظ استعما ل کرتا ہے اور صلح کر نے کے لئے دبا ؤ ڈا ل ر ہا ہے ۔ مسرت بی بی کا کہنا تھا کہ وہ جب تھا نہ جا تی ہے تو اسکے پیچھے نا معلوم افرا د لگ جا تے ہیں اور اکثرا وقات اس کو ٹیلی فو ن پر قتل کی د ھمکیا ں بھی ملتی ہیں ۔ خاتون نے روزنامہ ’’ پا کستا ن‘‘ کی وساطت سے اعلی ٰ حکام سے انصا ف کی اپیل ہے ۔ اس حوالے سے انچا ر ج انویسٹی گیشن مغل پو ر ہ نواز چیمہ کا کہنا تھا کہ الزا مات بے بنیا د ہیں ،مسرت بی بی ان کی بیٹی جیسی ہے اور مقد مہ میں نا مزد ملزما ن جیل میں ہے جبکہ افتخا ر تفتیش التواء میں شامل ہے ۔

مزید : علاقائی