چیونٹیوں نے بچے کی نیند حرام کردی،آخر کار چھٹکارا مل ہی گیا

چیونٹیوں نے بچے کی نیند حرام کردی،آخر کار چھٹکارا مل ہی گیا
چیونٹیوں نے بچے کی نیند حرام کردی،آخر کار چھٹکارا مل ہی گیا

  

کنبرا(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا کے شہر میلبرن میں ایک بچے نے اپنے باپ سے شکایت کی کہ اس کے کمرے کی دیوار سے تمام رات آواز آتی رہتی ہے جس کی وجہ سے وہ سو نہیں سکتا۔ کئی دن مسلسل یہی شکایت کرنے پر بالآخر باپ نے دیوار توڑ ڈالی اوراندر سے ایسی چیز برآمد ہو گئی کہ باپ کے ہوش اڑ گئے۔ برطانوی اخبار ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق ایڈم لٹل نامی اس شخص کا بیٹا انتہائی خوفزدہ رہتا تھا۔ اس کا کہنا تھا کہ اس کے کمرے کی دیوار میں کوئی بھوت رہتا ہے۔ ایڈم کا کہنا تھا کہ مسلسل شکایت کرنے پر ایک رات میں اس کے کمرے میں گیا تو وہ انتہائی خوفزدہ حالت میں اپنے ہاتھوں سے کان بند کیے لیٹا ہوا تھا۔ اس نے ہاتھ اس شدت سے کانوں پر دے رکھے تھے کہ کانوں پر ہاتھوں کے نشانات بن گئے تھے۔ اس پر میں نے دیوار توڑنے کا فیصلہ کر لیا۔رپورٹ کے مطابق اگلی صبح جب ایڈم نے ایک کونے سے دیوار توڑی تو اندر سے چیونٹیوں کا ایک جم غفیر برآمد ہونا شروع ہو گیا اور چند سکینڈز میں ہی لاکھوں چیونٹیاں کمرے کے فرش پر نکل آئیں اور فرش سیاہ نظر آنے لگا۔ ایڈم نے میونسپل ورکرز کو اطلاع دی جنہوں نے آ کر کمرے کی صفائی کی اور چیونٹیوں کو صاف کرکے لے گئے۔ ایڈم نے اپنے فیس بک پر دیوار سے برآمد ہونے والی چیونٹیوں کی تصاویر شیئر کی ہیں اور واقعہ بیان کیا ہے۔ بڑی تعداد میں صارفین ان تصاویر کو دیکھ کرشدید حیرت کا اظہار کر رہے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4