ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم

ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس محمد فرخ عرفان خان نے عدالتی حکم پر عمل درآمد نہ کرنے پر ڈی آئی جی انویسٹی گیشن لاہور چودھری سلطان احمد کو 21 فروری کو ذاتی حیثیت میں پیش ہونے کا حکم دے دیاہے۔درخواست گزار سب انسپکٹر ریٹائرڈ نذیر احمد کی جانب سے دائر درخواست میں ان کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ اس نے ایک پرائیویٹ ہسپتال سے علاج کرایا۔ جس پر ایک لاکھ روپے خرچ آیا۔ عدالت نے ادائیگی کے لئے 4 نومبر 2016 کو درخواست نمٹاتے ہوئے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کو چھ ہفتوں میں زیرالتواء درخواست پر فیصلہ کرنے کا حکم دیا۔ لیکن عدالتی حکم کے باوجود ڈی آئی جی انویسٹی گیشن نے فیصلہ نہیں کیا۔ جو توہین عدالت کے مترادف ہے لہذا عدالتی حکم عدولی پر ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔

مزید : صفحہ آخر