خوشاب کے سیاحتی منصوبوں میں کوتاہی نہیں برتی جائیگی، حمزہ شہباز

خوشاب کے سیاحتی منصوبوں میں کوتاہی نہیں برتی جائیگی، حمزہ شہباز

لاہور( جنرل رپورٹر)قومی اسمبلی حمزہ شہباز نے ہدایت کی ہے کہ وادی سون سکیسر میں عالمی معیار کے مطابق پبلک ریزاٹ اور تفریحی سرگرمیوں کی تشکیل کو یقینی بنایا جائے ،اور پنجاب حکومت کے 194ملین روپے کے ترقیاتی منصوبوں کو مقررہ مدت میں معیاری انداز میں مکمل کیاجائے ۔ ٹو رازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہاکہ کلرکہار اور خوشاب کے گردوپیش سیاحتی منصوبوں کو جلداز جلد پایہ تکمیل تک پہنچا یاجائے ۔اسی طرح پتریاٹہ چیئر لفٹ کی بحالی و مرمت، اچھالی لیک میں جاگنگ و بائی سائیکل ٹریک ،ریسٹورنٹ کی تعمیر او رماسٹر پلان کے مطابق ترقیاتی منصوبے 30مارچ تک مکمل کئے جائیں اور ان تمام سیاحتی منصوبوں کو معیاری اندازمیں مکمل کیاجائے ۔حمزہ شہبا زنے کہاکہ صوبہ پنجاب کے ٹورازم منصوبوں میں معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا اور کنہالی گارڈن ،کنھٹی باغ ،مری ،اچھالی لیک اور کھبیکی جھیل میں جاری ترقیاتی سکیموں کی وہ خود نگرانی کرینگے تاکہ وہاں جانے والے سیاحوں کو معیاری سہولتیں حاصل ہوسکیں ۔حمزہ شہباز نے ہدایت کی کہ ٹورازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن صوبے میں نئے سیاحتی مقامات کی بھی نشاندہی کرے ۔انہوں نے لاہور میں تین نئی ٹور ازم بسوں کی شمولیت کو خوش آئیند قراردیا ۔ اس طرح پتریاٹہ میں 9نئے چیئر لفٹ گینڈ لاگ اور جاری ترقیاتی کاموں کی جلد تکمیل پر اطمینان کا اظہار کیا ۔اجلا س میں حمزہ شہباز کو ایم ڈی ٹور ازم احمر ملک اور ڈائریکٹر جنرل اربن یونٹ ڈاکٹر ناصر نے شعبہ سیاحت میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر تفصیلی بریفنگ دی ،وائس چیئر مین پنجاب ٹو رازم ڈویلپمنٹ کارپوریشن عمران علی گورائیہ نے کہاکہ مقررہ مدت میں منصوبوں کی معیارکے مطابق تکمیل کو یقینی بنایا جائیگا ۔کمشنر سرگودہا نے یقین دلایا کہ خوشاب میں جاری سیاحتی منصوبوں میں کوئی کوتاہی نہیں برتی جائیگی۔ حمزہ شہباز نے ہدایت کی کہ سون ویلی کے آئندہ تین سالہ فیزiiکے ترقیاتی منصوبوں پر بھی فوری آغازکیا جائے ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ ٹی ڈی سی پی کے عوامی دلچسپی کے منصوبوں کو خاصی پزیرائی مل رہی ہے او رلاہور میں سیاحتی بسوں پر 80ہزار وزیٹرز سیر کرچکے ہیں اسی طرح کلر کہار،مری سون سکیسر اور دیگر سیاحتی مقامات پر بھی واضح بہتری سامنے آرہی ہے ۔

حمزہ شہباز

مزید : صفحہ آخر