مقدمہ قتل میں سزائے موت اور عمر قید پانے والوں کی سزائیں کالعدم، ملزمان رہا

مقدمہ قتل میں سزائے موت اور عمر قید پانے والوں کی سزائیں کالعدم، ملزمان رہا

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس صداقت علی خان اور جسٹس شہرام سرورچودھری پر مشتمل بنچ نے شہری کے مقدمہ قتل میں سزائے موت اورعمر قید پانے والوں کی سزاؤں کو کالعدم کرتے ہوئے عدم شہادتوں پر دو ملزموں کو رہا کرنے کا حکم دے دیا۔اپیل کنندگان رمضان وغیرہ کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیاگیا تھا کہ کوٹ رادھا کشن میں محمد عثمان نامی شخص کو قتل کردیا گیا جس پر انہیں اس کیس میں ملوث کردیا گیا جبکہ ماتحت عدالت نے چشم دید گواہان کی عدم موجودگی اورناکافی شواہد کے باوجود ایک کو سزائے موت اور ایک کو عمر قید کی سزا سنا دی،حالانکہ انکا نام ایف آئی آر میں درج نہیں تھا ، ان کو بعد میں مقدمہ میں شامل کیا گیا ،لہذا سزا کو کالعدم قرار دیتے ہوئے رہا کرنے کا حکم دیا جائے ۔

ملزمان رہا

مزید : صفحہ آخر