لاہور، فیصل آباد میں گیس کا شدید بحران، عوام سڑکوں پر نکل آئے، ایل پی جی، لکڑی، کوئلہ بیچنے والوں کی چاندی

لاہور، فیصل آباد میں گیس کا شدید بحران، عوام سڑکوں پر نکل آئے، ایل پی جی، ...

فیصل آباد(سپیشل رپورٹر)فیصل آباد میں سوئی گیس اور بجلی کی بندش دیگر مسائل سے پریشان عوام 4مختلف مقامات پر سڑکوں پر نکل آئے اور ٹائروں کو آگ لگا کر ٹریفک بلاک کر دی مظاہرین نے احتجا ج کے دوران سرکاری محکمہ جات اور حکومت وقت کے خلاف شدید نفرت انگیز نعرہ بازی کی مختلف سڑکوں پر عوامی احتجاج کے باعث فیصل آباد میں ٹریفک نظام بری طرح جام ہو گیا ٹریفک پولیس خاموش تماشائی کا کردار ادا کرتی رہی جبکہ مقامی پولیس کی طرف سے کئی گھنٹوں تک لوگوں کے مسائل کے حل کی یقین دہانیوں کے ساتھ ماحول کوپرامن رکھنے کی مشتعل مظاہرین بالآخر منتشر ہو گئے تفصیلات کے مطابق فیصل آباد میں سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی اسلام نگر‘نیو سول لائن‘ مدینہ ٹاؤن‘ کریم ٹاؤن‘ غلام محمد آباد‘ رضا آباد‘ملت ٹاؤن سمیت تقریبا ایک درجن سے زائد آبادیوں میں سوئی گیس بدترین لوڈشیڈنگ شروع ہو گئی ہے اکثر علاقوں میں سارا سارا دن گیس بند رہتی ہے اس دوران مقامی ڈیلروں نے ایل پی جی‘ کوئلے‘لکڑی اور دیگر متبادل ایندھن کی بلیک میں فروخت کرنا شروع کر رکھی ہے رہی سہی کسر فیسکو کے غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ شیڈول نے نکال دی ہے گذشتہ رات اسلام نگر میں سوئی گیس کی بندش کے ساتھ بجلی کی لوڈشیڈنگ بھی جاری تھی کہ اس دوران نامعلوم چور بجلی کا ٹرانسفارمر چوری کر کے لے گئے جس سے اسلام نگر مکمل طور پر تاریکی میں ڈوب گیا۔

فیصل آباد،مظاہرے

لاہور ( خبر نگار) گیس کی بند ش نے گھروں کے چولہے ٹھنڈے کردئیے ہیں۔ سی این جی اسٹیشنوں اور فرٹیلائرزسیکٹرکی گیس بند کرنے سے بھی گیس کاپریشرگھروں تک نہیں پہنچ سکاہے جس پر گھریلو صارفین مجبورا ایل پی جی کے سلنڈروں اور لکڑیوں سے کھانے پکانے لگے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق سردی کی شدت اور دھند کے باعث گیس کی ڈیمانڈ حیرت انگیز تک بڑھ گئی ہے اور گیس کمپنی کی جانب سے سی این جی سیکٹر،فرٹیلائزرسیکٹرسمیت ایک بڑے پاورپلانٹ کوگیس کی سپلائی معطل کرنے سے بھی گھروں میں گیس کاپریشرنہیں بڑھ سکاہے جس پر گھریلو صارفین گزشتہ روز بھی گیس کی بندش کے خلاف سراپااحتجاج بنے رہے ہیں لاہور میں گڑھی شاہو ،بی بی دامن ،رشید پورہ ،غازی آباد ،باغبانپورہ سمیت سمن آباد اور ساند ہ کے مکین گیس کی بندش کے خلاف سراپا احتجاج بنے رہے ہیں جبکہ اس کے ساتھ گیس کمپنی کے دفاترمیں بھی شکایات لیکر آنے والے صارفین کی تعداد میں اضافہ ریکارڈ کیاگیاہے ۔ ایم ڈی امجد لطیف نے بتایاکہ گھروں میں کمپریسراستعمال بڑھ جانے پر گیس کی قلت کی شکایات زیادہ ہیں صارفین گیس ہیٹرزکی بجائے گرم کپڑوں کااستعمال کریں اور کمپریسرکااستعمال کرنے سے گریز کریں اس سے گیس کنکشن منقطع ہوسکتے ہیں جبکہ گیزرکاکم سے کم استعمال کریں ۔ایم ڈی نے مزید بتایاکہ صارفین گیس کھانے تیارکرنے کے لیے استعمال کریں تاکہ تمام صارفین تک گیس کی سپلائی کوممکن بنایاجاسکے ۔

گیس شارٹ فال

مزید : صفحہ آخر