قیام پاکستان کے بعد سندھ میں اب تک 12سیاسی گورنر مقرر ہوئے

قیام پاکستان کے بعد سندھ میں اب تک 12سیاسی گورنر مقرر ہوئے

کراچی (رپورٹ/نعیم الدین) پاکستان کے قیام کے بعد سے صوبہ سندھ میں 31گورنر ز میں 7 کا تعلق مسلم لیگ سے رہا جبکہ پیپلز پارٹی کے 4 گورنر نامزد ہوئے۔ سول ایڈمنسٹریشن سے تعلق رکھنے والے 3 او رشعبوں سے تعلق رکھنے والوں کی تعداد 5 رہی ،جبکہ مسلح افواج سے 5 گورنر ز آئے ۔ اس طرح عدلیہ سے تعلق رکھنے والے 3 گورنرز نامزد ہوئے ۔ ایک کا تعلق متحدہ قومی موومنٹ سے رہا۔ آخر میں منتخب ہونے والے سپریم کورٹ کے ریٹائرڈ چیف جسٹس تھے ۔ جن کی مدت سب سے کم رہی جو 2 ماہ کا عرصہ پر محیط رہی۔ پاکستان کی تاریخ کے طویل ترین گورنر ڈاکٹر عشرت العباد رہے جو 14 سال حکومت کرگئے۔ قیام پاکستان کے بعد سندھ کے پہلے گورنر مسلم لیگ کے شیخ جی ایچ ہدایت اﷲ تھے جنہوں نے 15اگست 1947 سے 4 اکتوبر 1948 تک گورنر رہے۔ دوسرے گورنر بھی مسلم لیگ کے شیخ دین محمد تھے جو 7اکتوبر1948 سے 19نومبر1949 تک اپنے عہدے پر فائز رہے ۔ تیسرے نمبر پر مسلم لیگ کے ہی میاں امین الدین تھے جو 19نومبر1949 سے یکم مئی 1953 تک براجمان رہے۔ چوتھے گورنر جارج بکسنڈال کنسٹنٹائن تھے جو 2مئی 1953 سے 12 اگست 1953 تک رہے ، ان کا تعلق سول ایڈمنسٹریشن سے تھا۔ پانچویں گورنر مسلم لیگ کے حبیب ابراہیم رحمت اﷲ تھے جو 12 اگست 1953 سے 23 جون 1954 تک محدود تھی۔ چھٹے گورنر مسلم لیگ کے نواب افتخار حسین تھے جن کی مدت 24جون 1954 سے 14 اکتوبر 1955 تھی۔ ساتویں گورنر لیفٹنٹ جنرل رخمان گل جن کا تعلق پاک فوج سے تھا ، یکم جولائی 1970 سے 20 دسمبر 1971 تک عہدے پر فائز رہے۔ آٹھویں گورنر پاکستان پیپلز پارٹی کے ممتاز بھٹو تھے جو 24دسمبر 1971 سے 20 اپریل 1972 تک گورنر رہے۔ نویں گورنر پیپلز پارٹی کے ہی میر رسول بخش تالپور تھے جو 29اپریل 1972 سے 14 فروری 1973 تک گورنر کے عہدے پر براجمان رہے۔ دسویں گورنر بیگم رعنا لیاقت علی خان تھیں جو 15فروری 1973 سے 5 جولائی 1977 تک آزاد حیثیت سے گورنر کے عہدے پر فائز رہیں۔ گیارہویں گورنر پاکستان پیپلز پارٹی کے محمد دلاور خانجی یکم مارچ 1976 سے 5 جولائی 1977 تک گورنر رہے۔ بارہویں گورنر عبدالقادر شیخ تھے جن کا دورانیہ 6جولائی 1977 سے 17 ستمبر1978 تک محدود رہا۔ تیرہویں گورنر پاک فوج کے لیفٹیننٹ جنرل ایس ایم عباسی تھے جو 18ستمبر1978 سے 6 اپریل 1984 تک گورنر رہے۔ چودہویں گورنر لیفٹیننٹ جنرل (ر) جہانداد خان تھے جو 7 اپریل 1984سے 4جنوری 1987 تک گورنر کے عہدے پر رہے۔ پندرہویں گورنر مسلم لیگ کے اشرف تابانی تھے جو 5جنوری1987 سے 23 جون 1988 تک اس عہدے پر براجمان رہے۔ سولہویں گورنر پاک فوج کے جنرل (ر) رحیم الدین خان تھے جو 24جون 1988 سے 12 ستمبر1988 تک گورنر رہے۔ سترہویں گورنر جسٹس قدیرالدین احمد تھے جو 12ستمبر1988 سے 18اپریل 1989 تک گورنر سندھ رہے۔ اٹھارویں گورنر جسٹس فخر الدین جی ابراہیم تھے جن کا دورانیہ 19اپریل 1989 سے 6 اگست 1990 تک رہا۔ انیسویں گورنر محمود ہارون تھے جن کا تعلق کسی بھی جماعت سے نہیں تھا او ر وہ 6اگست 1990 سے 18جولائی 1993 تک گورنر سندھ رہے۔ بیسویں گورنر حکیم سعید تھے جو 19جولائی 1993 سے 23 جنوری 1994 تک گورنر رہے۔ اکیسویں گورنر دوبارہ محمود ہارون بنے اس دوران وہ 23جنوری 1994 سے 21مئی 1995 تک گورنر رہے۔ بائیسویں گورنر سندھ پیپلز پارٹی کے کمال الدین اظفر تھے جو 22مئی 1995 سے 17 جون 1999 تک گورنر رہے۔ تئیسویں گورنر آرمی کے لیفٹیننٹ جنرل (ر) معین الدین حیدر بنے جو 17مارچ1997 سے 17 جون 1999 تک اس عہدے پر فائز رہے۔ چوبیسویں گورنر ممنون حسین تھے جو 19جون 1999 سے 12 اکتوبر1999 تک سندھ کے گورنر رہے۔ پچیسویں گورنر ایئرمارشل داؤد پوتہ تھے جو 25اکتوبر 1999 سے 24مئی 2000 تک گورنر کے عہدے پر فائز رہے۔ چھبیسویں گورنر مسلم لیگ (ق) کے محمد میاں سومرو تھے جو 25مئی 2000 سے 26 دسمبر 2002 تک گورنررہے۔ ستائیسویں گورنر ایم کیو ایم کے ڈاکٹر عشرت العباد خان تھے جو سب سے طویل عرصے تک سندھ کے گورنر رہے ان کا دورانیہ 27دسمبر2002 سے 9 نومبر 2016 پر محیط ہے۔ اٹھائیسویں گورنر جسٹس (ر) سعید الزماں صدیقی تھے جو 9نومبر2016 سے 11 جنوری 2017تک گورنر رہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول