اخوت کے زیر اہتمام ملک کی پہلی ’’ود آؤٹ فیس‘‘یونیورسٹی کا قیام

اخوت کے زیر اہتمام ملک کی پہلی ’’ود آؤٹ فیس‘‘یونیورسٹی کا قیام

کراچی(پ ر) ملک کے نامور فلاحی ادارے اخوت کی زیرِ تعمیر اور پاکستان کی تاریخ میں اپنی نوعیت کی پہلی 'وِدآؤٹ فیس(Without Fee )'یونیورسٹی لاہور کے قریب قصور کے مقام پرقائم کی جارہی ہے جس میں زیرِ تعلیم طلبہ و طالبات کو تمام تر اعلیٰ تعلیم بِلامعاوضہ فراہم کی جائیگی۔اس ضمن میں اخوت 22تا 28جنوری کراچی، ملتان، لاہور اور اسلام آباد میں فنڈ ریزنگ تقریبات منعقد کر رہی ہے جن میں ترکی کاعالمی شہرت یافتہ ثقافتی طائفہ اپنے فن کا مظاہرہ کرے گا. ان تقریبات کا اصل مقصد یونیورسٹی کیلیے درکا ر مالی وسائل کا حصول ہے تا کہ اخوت کے تحت قائم کردہ اعلیٰ تعلیمی ادارے کی بروقت تکمیل عمل میں لائی جاسکے۔ تقریبات کا انعقاد ترکی کے سفارت خانے، شہرِ کونیہ کے محکمہ بلدیات اور ٹرکش ائر لائنز کے تعاون سے کیا جارہا ہے۔زیرِ تعمیر اخوت یونیورسٹی ملک کی وہ واحد جامعہ بننے جا رہی ہے جہاں تمام تر تعلیمی و اقامتی سہولیات ملک کے تمام صوبوں سے تعلق رکھنے والے طلبہ و طالبات کیلیے بلا معاوضہ دستیاب ہونگی۔ واضح رہے کہ اخوت کے زیرِ انتظام اخوت کالج،اخوت انسٹیٹیوٹ آف سوشل انٹرپرائز اینڈ مینجمنٹ (AISEM)اورفیصل آبادانسٹیٹیوٹ آف ریسرچ ، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی (FIRST) پہلے ہی سے طالب علموں کو اعلیٰ تعلیم سے آراستہ کر رہے ہیں ۔ ملک میں تعلیم کے لیے اخوت نے حکومتِ پنجاب کے تعا ون سے 150اسکولوں کو اپنے زیرِ انتظام لیا ہے تا کہ ان بنیادی تعلیمی اداروں کومضبوط کیا جاسکے۔ کِرن فاؤنڈیشن کے ساتھ لیاری کراچی میں قائم DCTOاسکول مقامی بچوں کو معیاری تعلیم فراہم کرتے ہوئے انکے روشن مستقبل کو یقینی بنا رہا ہے ۔ اسی کے ساتھ ساتھ اخوت نے سندھ کے سب سے قدیم و تاریخی حیثیت کے حامل این جے وی(NJV) اسکول کو بھی اپنالیا ہے تا کہ عمارت کی کھوئی ہوئی شان و شوکت کو از سرِ نو بحال کرکے ادارے کو ملک کے نامور تعلیمی مرکز میں تبدیل کیا جاسکے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر