عمران خان کا الزامات کی آڑ میں وزیراعظم بننے کا خواب پورا نہیں ہو سکتا: سعد رفیق

عمران خان کا الزامات کی آڑ میں وزیراعظم بننے کا خواب پورا نہیں ہو سکتا: سعد ...

اسلام آباد(آن لائن)وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ عمران خان اور شیخ رشید کو نواز فوبیا ہے ، عمران خان کا وزیراعظم بننے کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو گا ،ہم نے کوئی استثنیٰ نہیں مانگا لیکن پارلیمنٹ ہاؤس کے استحقاق کو بھی مجروع نہیں کیا جاسکتا ،شیخ رشید کو مسلم لیگ(ن) نے لف (بقیہ نمبر6صفحہ12پر )

گھا س نہیں ڈالی ،اس وجہ سے چیخ رہے ہیں ۔تفصیلات کے مطابق بدھ کے روز سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ عمران خان اور سراج الحق میڈیا پر لمبے لمبے بیان کی بجائے عدالتی کارروائی پر توجہ دیں ، ان کی سنجیدگی کا مظاہرہ یہی سے کیا جاسکتا ہے کہ وہ عدالت میں آکر سوئے رہتے ہیں ، پانامہ پیپرز کی جنگ میڈیا پر لڑی جارہی ہے ، مقدمے میں الزام اور جھوٹ کے علاوہ اورکچھ بھی نہیں ہے ، عمران خان نے لوگوں کو اکسایا کہ غیر قانونی طورپر پیسہ ہنڈی کے ذریعے ملک سے باہر بھیجا جائے ، آج عدالت میں 20ارب ڈالر فوری ریمیٹنس کرنے کا کہا گیا تاکہ نوازشریف پر الزام عائد ہو سکے اور پاکستان کی معیشت کا بیڑہ غرق ہو جائے ، عمران خان سے پوچھا جائے کہ وہ پاکستان کے کن دشمنوں کے لئے کام کررہے ہیں؟، عمران خان کو چاہیے کہ وہ میڈیا کی بجائے عوام میں جاکر سیاست کریں ، عمران خان کے پاس عدالت میں پیش کر نے کے لئے کوئی ثبوت نہیں ہوتا لیکن دباؤ ڈالنے کے لئے آ جاتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ عمران خان اور شیخ رشید کو نواز فوبیا ہو گیا ہے ،کبھی عمران خان دارالخلافہ ،الیکشن کمیشن ، نیب اور پارلیمنٹ کا گھیراؤ کرتے ہیں تو کبھی اقتصادی راہ داری جو ملک کے لئے گیم چینجر ہے اس پر دباؤ ڈالنے کی کوشش کرتے ہیں تاکہ چینی حکومت حالات خراب ہونے کے باعث یہاں پر کام شروع نہ کرسکے ۔نوازشریف 2018ء کے بعد بھی وزیراعظم ہوں گے اور عمران خان کا بچپن کا وزیراعظم بننے کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو گا ۔انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخوا کے حکمران اپنے صوبے کی کرپشن پر تو بات کرتے نہیں اور نہ ہی اپنے وزراء سے استعفے لیتے ہیں لیکن دوسروں سے استعفے لینے کا ان کو بہت شوق ہے ، خیبر بنک لوٹنے والے وزیرکو آخر کیوں نہیں نکالا گیا اورعمران خان نے احتساب کمیشن کے ہاتھ پاؤں کیوں کاٹے؟اگر عمران خان کو کوئی کہے کہ ان کا کان کاٹ دیا گیا ہے تو وہ اس کے پیچھے بھاگ پڑیں گے ۔عمران خان کوئی مقدس گائے نہیں ہے ،مسلم لیگ (ن) نے شیخ رشید کو گھا س نہیں ڈالی اس لئے وہ چیخ رہا ہے ، یہ وہ پلے ہیں جنہیں کوئی جگہ نہیں ملتی تو وہ پی ٹی آئی میں شامل ہو جاتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ عمران خان نے گالیوں اور الزامات تراشی کی سیاست کو فروغ دیا ہے اور عمران خان ناقابل اصلاح ہیں اس لئے ان کی ٹیوننگ ضروری ہے ، نوازشریف عدالت کے پیچھے نہیں چھپ رہے ، مسلم لیگ (ن) تو وکلاء کی بحالی کیلئے بھی میدان میں آئی تھی لیکن عمران خان اس وقت گھر میں چھپ کر بیٹھ گئے تھے ،موصوف پنجاب میں بھی چھپے تو لڑکوں نے ان کو پکڑ لیا تھا ، عمران خان کارکنوں کو پکڑوا کر باہر پش اپس لگاتا ہے ، لیڈر وہ ہوتا ہے جو خود آگے چلتا ہے اور کارکنوں کو پیچھے لے کر چلتا ہے لیکن عمران خان تو اپنے کارکنوں کو مرواتے ہیں ۔عمران خان کو چاہیے کہ الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی فنڈز کی خورد برد کا جواب دیں ، حسن نواز اور حسین نواز کی یہاں پر پیش ہونے کی کوئی مجبوری نہیں اور نہ ہی ہم اپنے حقوق سے دستبردار ہوئے اور نہ ہی کوئی استثنیٰ مانگا لیکن پارلیمنٹ کے استحقاق کو مجروع نہیں کیا جاسکتا ، ہم جھوٹ کو سامنے لے کر آئیں گے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر