سندھ ہائیکورٹ کا ایان علی کا نام فوری طورپر ای سی ایل سے نکالنے کا حکم اور پھر تھوڑی بعد ہی فیصلہ معطل

سندھ ہائیکورٹ کا ایان علی کا نام فوری طورپر ای سی ایل سے نکالنے کا حکم اور پھر ...
سندھ ہائیکورٹ کا ایان علی کا نام فوری طورپر ای سی ایل سے نکالنے کا حکم اور پھر تھوڑی بعد ہی فیصلہ معطل

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)کرنسی سمگلنگ کیس میں پھنسی ماڈل گرل ایان علی کی درخواست منظور کرتے ہوئے سندھ ہائیکورٹ نے ان کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کا حکم دیدیالیکن تھوڑی ہی دیر بعد فیصلہ معطل کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ایان علی نے ای سی ایل سے نام نکال کر بیرون ملک جانے کی اجازت کیلئے سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا جس پر دورکنی بینچ کے جسٹس احمد علی شیخ اور جسٹس کے کے آغاکے فیصلے میں اختلاف تھا اور بغیر کوئی فیصلہ سنائے معاملہ ریفری جج جسٹس نعمت اللہ پھلپھوٹو کو بھجوادیاگیاتھا، اُنہیں نے جسٹس کے کے آغا کے موقف سے اتفاق کیا اور ایان علی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیدیا۔

عدالتی فیصلے پر سرکاری وکیل نے سپریم کورٹ میں اپیل کیلئے ایک ہفتے یا 15دن کی مہلت مانگی لیکن عدالت نے یہ استدعا مستردکرتے ہوئے فوری طورپر ای سی ایل سے نام نکالنے کا حکم دیدیا۔

تھوڑی دیر بعد ڈپٹی اٹارنی جنرل سے عدالت سے استدعا کی کہ اپیل کرنا وفاق کا حق ہے ، سپریم کورٹ میں اپیل کرنے کا موقع دیا جائے جس پر عدالت نے 10دن کی مہلت دیتے ہوئے فیصلہ عارضی طورپر معطل کردیا۔

مزید : کراچی