فنکاروں کی طرف سے زینب کے قاتل کو پھانسی دینے کا مطالبہ

فنکاروں کی طرف سے زینب کے قاتل کو پھانسی دینے کا مطالبہ
فنکاروں کی طرف سے زینب کے قاتل کو پھانسی دینے کا مطالبہ

  

 لاہور (شوبز رپورٹر) گزشتہ دنوں قصور میں ہونے والے المناک حادثہ پیش آنے کے بعد جہاں پوری پاکستانی عوام اور دنیا بھر میں اس سانحے پر غم و غصہ کا اظہار کیا جارہا ہے وہیں پاکستان کے معروف فلمی و سٹیج کے اداکار بھی غمگین ہیں۔ زینب جیسا پھول کچلے جانے کے بعد الحمراء میں جاری ڈرامہ، ’’اکھ لڑے بدو بدی‘‘ کی کاسٹ نے روزنامہ ’’پاکستان‘‘ سے گفتگو میں شدید غم و غصہ کا اظہار کیا، معروف اداکارہ پائل چودھری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا زینب پورے پاکستان کی بیٹی تھی، جس کو درندہ صفت انسان نے اپنی ہوس کا نشانہ بناتے ہوئے موت کی وادی میں اتار دیا جس پھول کے ابھی کھیلنے کے دن تھے اس گھناؤنے فعل سے موت دینے والے شخص کو سرعام پھانسی دینی چاہئے، اور آئندہ اس حوالے سے ایسا قانون بنانا چاہئے کہ مجرموں کو فوری طور پر کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔ فلم، ٹی وی اور سٹیج کی معروف اداکارہ کرن نور نے اشکبار آنکھوں سے کہا کہ جس شخص نے بھی زینب کے ساتھ زیادتی کی اور اسے موت کی آغوش میں سلایا ایسے شخص کو سنگسار کرنا چاہئے۔سینئر اداکار گوشی خان نے کہا یہ کام کسی مسلمان کا نہیں ہوسکتا۔ آئندہ کے بچاؤ کیلئے آرمی چیف، چیف جسٹس آف پاکستان اور حکمرانوں کو مل بیٹھ کر کوئی اقدام کرنا ہوگا، تاکہ آئندہ کوئی زینب کسی شخص کی درندگی کا شکار نہ ہوسکے۔ محمد زبیر نے کہا کہ ایسے واقعات ملک پاکستان کی بدنامی کا باعث ہیں، ایمان کی کمی کے باعث ایسے واقعات جنم لے رہے ہیں۔ نواز انجم نے کہا کہ اسلام کے نام پہ بنے اس پاکستان میں تمام کام شیطان والے ہورہے ہیں اس ملک کے باسی بوڑھے، جوان، مرد، عورت، بچے اور خاص طور پر بچیاں کوئی بھی محفوظ نہیں۔

مزید : کلچر