اندراج مقدمہ میں ناکامی پر2 لڑکیوں نے استغاثے دائرکر دیے

اندراج مقدمہ میں ناکامی پر2 لڑکیوں نے استغاثے دائرکر دیے

لاہور(نامہ نگار)پولیس کی طرف سے مقدمات درج نہ کرنے پر دو لڑکیوں نے اپنے ساتھ ہونے والی زیادتیوں پر دو ملزمان کے خلاف الگ الگ استغاثے سیشن کورٹ میں دائر کردیے ہیں۔اسلام پورہ کی 14سالہ لڑکی دائم عامر کی طرف سے 3ملزمان محمد عدنان، احسان الہی اور ایک نامعلوم شخص کے خلاف دائراستغاثہ میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ وہ نابالغ ہے ،اپنی والدہ کے ساتھ بازار گئی جہاں سے اسے محمد عدنان اور اس کے ساتھیوں نے گن پوائنٹ پر اٹھا لیا اورفیصل آباد لے گئے جہاں انہوں نے اسے ایک مکان میں محبوس کر دیا اوربداخلاقی کرتے رہے ،میرے اغوا ء پر سبزہ زار میں مقدمہ درج کروایاگیالیکن پولیس ملزمان کو نہیں پکڑسکی ،وہ موقع پا کر ملزمان کے چنگل سے بچ نکلنے میں کامیاب ہو ئی،عدالت سے استدعا ہے کہ ملزمان کے خلاف کارروائی کی جائے ،سیشن جج نے استغاثے کو سماعت کے لئے ایڈیشنل سیشن جج آفتاب احمد رائے کی عدالت میں بھجوادیاہے۔دوسرا استغاثہ مغل پورہ کی سومیاں مظفر نے دائر کیا ہے جس میں اس نے ملزم اکرم مٹھو کو نامزد کیا ہے ،استغاثہ میں کہا گیا ہے کہ وہ گھر میں اکیلی تھی کہ اکرم دیوار پھلانگ کر آگیا ،اس نے بداخلاقی کرنے کی کوشش کی جو اس کے بیٹے نے ناکام بنا دی۔ سیشن جج نے محمد اکرم کا چالان سماعت کے لئے ماڈل کورٹ کے جج رحمت علی کی عدالت میں بھجوادیاہے۔

مزید : علاقائی